خیبر پختونخوا اسمبلی کے انتخابات کی تاریخ سامنے آگئی

123-32.jpg

پشاور: گورنر خیبرپختونخوا کے سیکریٹری کی جانب سے صوبے میں انتخابات کرانے کی تاریخ سے متعلق الیکشن کمیشن کے خط کا جواب دے دیا گیا ہے۔

گورنر خیبرپختونخوا نے صوبائی اسمبلی کے انتخابات کرانے کے لیے الیکشن کمیشن کو خط کا جواب دے دیا ہے، ذرائع کہتے ہیں الیکشن کی تاریخ 16 اپریل تجویز کی گئی ہے جبکہ گورنر کا موقف ہے انہیں الیکشن کی تاریخ کا علم نہیں کیونکہ خط کا جواب انہوں نے نہیں بلکہ سیکریٹری نے دیا ہے۔
الیکشن کمیشن نے خیبرپختونخوا اسمبلی کے انتخابات کی تاریخ کے لیے گورنر خیبرپختونخوا کو 25 جنوری کو خط لکھا تھا اور الیکشن کمیشن کی جانب سے استدعا کی گئی تھی کہ اسمبلی تحلیل ہونے کی صورت میں 90 روز میں الیکشن کرانے ہوتے ہیں، اس لیے الیکشن کی تاریخ دی جائے۔
گورنر ہاؤس کے ترجمان کے مطابق الیکشن کمیشن کو خط کا جواب دے دیا گیا ہے لیکن گورنر ہاوس کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں تاریخ کا ذکر نہیں کیا گیا تاہم ذرائع کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن کو 16 اپریل کی تاریخ دی گئی ہے۔
اس حوالے سے گورنر خیبرپخونخوا حاجی غلام سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے بتایا کہ ابھی الیکشن تاریخ کا علم نہیں الیکشن کمیشن نے خط چونکہ میرے سیکرٹری کو لکھا ہے اس لیے ابھی تاریخ نہیں بتا سکتا۔
دوسری جانب الیکشن کمیشن کے ترجمان نے کہا ہے کہ گورنر خیبرپختونخوا کی جانب سے ابھی تک کوئی خط موصول نہیں ہوا، ہمارے علم میں ایسی بات نہیں کہ الیکشن کی تاریخ کے لیے گورنر خیبرپختونخوا کا خط ملا ہو۔
اُدھر پی ٹی آئی خیبرپختونخوا کے ترجمان اور سابق صوبائی وزیر شوکت یوسفزئی نے کہا کہ گورنر نے الیکشن کمیشن کو خط تو لکھ دیا ہے لیکن تاریخ نہیں دی، معلوم نہیں الیکشن کی تاریخ دینے سے کیوں گھبرایا جارہا ہے، امپورٹیڈ حکومت آئین سے کھیل رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف نے آج رٹ پٹیشن جمع کرائی اور گورنر نے الیکشن کمیشن کو بغیر تاریخ کے خط لکھ دیا، ہمیں عدالت سے امید ہے کہ انصاف ملے گا۔

شیئر کریں

Top