لاہور ہائیکورٹ کا پنجاب حکومت کو قبرستانوں میں مفت تدفین کا حکم

lahore-high-court-LHC.jpg

شہری ساری زندگی حکومت کو مختلف اشیا خریدنے پر ٹیکس ادا کرتا ہے، مرتے وقت بھی اس سے قبر اور دیگر اشیا کے نام پر پیسے لیے جاتے ہیں، یہ حکومت کی ذمہ داری ہے وہ متعلقہ شہری کی تدفین کا خرچہ اٹھائے،انتظامیہ قبرستان تک تدفین کے لیے مفت ٹرانسپورٹ کی فراہمی کے لئے قانون میں ترمیم کرے ، چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ محمد قاسم خان کا تحریری فیصلے میں حکم
لاہور (آئی این پی) چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ محمد قاسم خان نے پنجاب حکومت کو قبرستانوں میں مفت تدفین کا حکم دے دیا۔ عدالت نے پنجاب بھر کے قبرستانوں میں تدفین کے لیے پیسوں کی وصولی پر پابندی لگا دی۔ہفتے کو تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس محمد قاسم خان نے 8 صفحات پر مشتمل تحریری فیصلہ جاری کر دیا۔ چیف جسٹس قاسم خان نے فیصلہ میں لکھا کہ مرنے والے افراد کی تدفین مفت کرنے سے متعلق پنجاب حکومت قانون میں ترامیم کرے۔ چیف جسٹس نے احادیث اور بین الاقوامی قوانین کو بھی فیصلے کا حصہ بنایا ہے۔چیف جسٹس قاسم خان نے فیصلہ میں لکھا کہ شہری ساری زندگی حکومت کو مختلف اشیا خریدنے پر ٹیکس ادا کرتا ہے، مرتے وقت بھی اس سے قبر اور دیگر اشیا کے نام پر پیسے لیے جاتے ہیں، یہ حکومت کی ذمہ داری ہے وہ متعلقہ شہری کی تدفین کا خرچہ اٹھائے، قانون میں ترمیم کی جائے تاکہ انتظامیہ قبرستان تک تدفین کے لیے فری ٹرانسپورٹ فراہم کرے۔فیصلے میں کہا گیا کہ انتظامیہ قبرستانوں کی دیکھ بھال اور درخت لگانے کے حوالے سے بھی اقدامات کرے۔ ایل ڈی اے کو نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز میں قبرستانوں کی جگہ مختص لازمی قرار دے دیاگیا ۔

شیئر کریں

Top