ملک کو غربت سے نکال دیا تو اعتماد سے خدا کا سامنا کرسکوں گا، وزیراعظم

12345-548.jpg

اسلام آباد(ویب ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ملک کو غربت سے نکال دیا تو اعتماد سے خدا کا سامنا کرسکوں گا۔وزیراعظم عمران خان نے روسی ٹی وی آر ٹی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ اقتدار میں آیا تو سب سے پہلے بھارت کو امن کے لیے مذاکرات کی پیش کش کی ، لیکن بھارت نے ہماری پیش کش مسترد کردی، مسئلہ کشمیر پاکستان اور بھارت کیدرمیان تسلیم شدہ معاملہ ہے جس کا حل ضروری ہے، بھارت میں انتہا پسند نظریے کی حکومت ہے،قوم پرستی کا مطلب ہر گز انتہا پسندی نہیں۔عمران خان نے کہا کہ ملک کو غربت سے نکال دیا تو اعتماد سے خدا کا سامنا کرسکوں گا، چین نے لوگوں کو غربت سے نکالا ،ہم چین سے سیکھ رہے ہیں۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ کسی بھی ملک پر اپنا نظریہ زبردستی لاگو کرنا کسی بھی قوم کیلییقابل قبول نہیں ہوتا، سمجھتا ہوں کہ کسی بھی تنازعہ کو جنگ سے حل کرنا بڑی بیوقوفی ہوگی، روس اور یوکرین کے درمیان معاملات کے پرامن طریقے سے حل کے خواہاں ہیں۔عمران خان نے کہا کہ جب دنیا بلاکس میں تقسیم ہوئی تو پاکستان امریکی بلاک میں گیا، ہم غیر ملکی امداد کے لیے بلاک کا حصہ بنے، بیرونی امداد ملک کے لیے ایک لعنت ہے، اس کی وجہ سے اپنا نظام نہیں بناسکے اور خود انحصاری نہیں رہی، امریکا کاساتھ دینے پر پاکستان کو بہت نقصان ہوا لہذا اب ہم کسی گروپ کا حصہ نہیں بنیں گے۔انہوں نے مزید کہا کہ کسی بھی ملک میں اس کا وقار قانون کی بالادستی سے وابستہ ہے، منی لانڈرنگ اور پیسہ چوری کیخلاف آواز اٹھا نا میرے مقصد کا حصہ ہے۔واضح رہے کہ وزیراعظم عمران خان سرکاری دعوت پر 23 سے 24 فروری کو روس کا دورہ کریں گے۔

شیئر کریں

Top