وزیراعلی اورمشیرخوراک کے حلقہ میں بیس روزسے تاریکی کے ڈیرے

12345-625.jpg

استور (بیوررورپورٹ)وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید اور صوبائی وزیر خوراک و نیٹکو شمس الحق کا اپنا ضلع استور کا ضلعی ہیڈ کواٹر گزشتہ بیس روز سے تاریخی میں ڈوبا ہوا ہے بجلی سے منسلک لوگوں کا کاروبار تباہ ہو رہا ہے سکولوں میں سالانہ امتحانات شروع ہوچکے ہیں انکی تعلیم متاثر ہو رہی ہے بہت ہی کم خودساختہ وولٹیج کی وجہ سے پہلے ہی لوگوں کے قیمتی بجلی کے آلات جل چکے ہیں گزشتہ بیس روز سے ایک بجلی کا آلہ مرمت ابھی تک نہیں ہوسکا ہے جبکہ دور جدید میں ایک ہفتے میں دنیا کے کسی بھی جگہ سے کوئی بھی چیز لے کر آسکتے ہیں مگر بدقسمتی سے آپکا اپنا ہوم اسٹیشن میں تمام تر وسائل کی دستیابی۔ بجلی کے اربوں کے منصوبوں کے باوجود ابھی تک گزشتہ تقریبا پندرہ ماہ سے بھی زیادہ عرصے سے پہلے تو خود ساخستہ بہت ہی کم ووٹیلج کی وجہ سے صارفین کو روزانہ کی بنیادوں پر قیمتی آلات اور بلب تک جلنے سے شدید نقصان کا سامنا رہا اب جبکہ استور کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک بجلی کا آلہ خراب ہونے سے گزشتہ بیس روز سے بجلی کا بحران ابھی تک اس میں یا تو محکمہ کی کوتائی یا اپ کے خلاف سازش یا پھر اپ کی طرف سے بھی عدم دلچسپی عوام سخت پریشان بجلی سے منسلک کاروبار ویران عوام اپ کی توجہ کی طلبگارہے۔

شیئر کریں

Top