کبریٰ خان نازیبا الزامات کیس: ایف آئی اے نے عدالت میں رپورٹ پیش کردی

123-328.jpg

کراچی: سوشل میڈیا پر نازیبا الزامات لگانے سے متعلق اداکارہ رابعہ اقبال عرف کبریٰ خان کی درخواست پر ایف آئی اے نے عدالت میں رپورٹ جمع کروا دی۔

رپورٹ کے مطابق سندھ ہائیکورٹ میں معروف اداکارہ کبری خان کی نازیبا الزامات لگانے کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی۔

جسٹس صلاح الدین پہنور کی رخصت کے باعث دوسری بینچ کی تشکیل کے لئے معاملہ چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کو ارسال کردیا گیا۔ سماعت کے دوران عدالتی حکم پر کبریٰ خان کیخلاف مہم چلانے والے سوشل میڈیا اکاؤنٹس سے متعلق ایف آئی اے نے رپورٹ پیش کی۔

ایف آئی اے نے رپورٹ میں کہا کہ کبریٰ خان کی درخواست پر کارروائی شروع کر دی ہے۔ کبری خان کیخلاف مہم چلانے والے تمام اکائونٹس بلاک کرنے کیلئے پی ٹی اے کو معاملہ بھیج دیا گیا ہے یوٹیوب، ٹوئٹر، انسٹا گرام سمیت دیگر اکاؤنٹس بلاک کرنے کیلئے بھی کہہ دیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ کبریٰ خان کی جانب سے دائر کی گئی درخواست کے بعد عدالت نے ایف آئی اے اور پی ٹی اے کو سوشل میڈیا پر اداکاراؤں سے متعلق مواد بلاک کرنے اور معاملے پر رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا تھا۔

اداکارہ نے 5 جنوری کو سندھ ہائیکورٹ سے رجوع کرتے ہوئے درخواست میں مؤقف اختیار کیا تھا کہ سابق فوجی افسر نے میڈیا انڈسٹری کی 4 اداکاراؤں پر جھوٹے الزامات لگائے۔ من گھڑت الزامات سے درخواستگزار و دیگر اداکاراؤں کی عزت اور وقار کو مجروح کیا گیا۔ عادل فاروق راجہ نے بعد میں ایک اور ویڈیو وضاحت کی اور پہلے والے مؤقف سے مکر گئے۔

درخواست میں 14 ٹوئٹر اور 13 انسٹا گرام سمیت 27 دیگر سوشل میڈیا اکاؤنٹس کی نشاندہی کرتے ہوئے انہیں بلاک کرنے کی درخواست کی گئی تھی۔

درخواست میں مزید کہا گیا تھا کہ اس دوران درخواستگزار سمیت اداکارہ کی ساکھ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا۔ درخواست میں شکوہ کیا گیا تھا کہ ہتک آمیز مواد کو ہٹانے کے لیے ایف آئی اے اور پی ٹی اے سے رابطہ کیا تھا لیکن یوٹیوبرز کیخلاف کوئی کارروائی نہیں کی گئی۔

شیئر کریں

Top