2019، ایل او سی پر بھارتی گولہ باری سے خواتین اور بچوں سمیت 59 افراد جاں بحق

logo.png

مظفرآباد:سال 2019 میں بھارتی فوج کی جانب سے لائن آف کنٹرول(ایل او سی) پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کے نتیجے میں خواتین اور بچوں سمیت 59 افراد جاں بحق جبکہ 2 سو 81 زخمی ہوئے۔

کے پی آئی کے مطابق حکومت آزاد کشمیر کے محکمہ ڈزاسٹر منیجمنٹ اور سول ڈیفنس کے سیکریٹری سید شاہد محی الدین قادری نے بتایا کہ جاں بحق افراد میں 43 مرد جبکہ 16 خواتین تھیں اسی طرح زخمیوں میں ایک سو 57 افراد مرد اور بقیہ خواتین تھیں۔ضلع کے اعتبار سے جانی نقصان کی تعداد بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 13 شہری کوٹلی، 12 نیلم، 11 حویلی، مظفر آباد، پونچھ میں 8، 8، بھمبرمیں 4 اور وادی جہلم میں 3 شہری جاں بحق ہوئے۔

اسی طرح زخمیوں میں سے 61 کا تعلق کوٹلی، 52 کا نیلم 51 کا پونچھ، 49 کا حویلی، 29 کا بھمبر، 20 کا مظفرآباد اور 19 زخمیوں کا تعلق وادی جہلم سے تھا۔عہدیدار نے بتایا کہ گولہ باری نے سرکاری عمارات کے علاوہ شہری املاک پر بھی تباہی مچائی جس میں مکانات، دکانیں، گاڑیاں شامل ہیں۔اس کی تفصیلات بتاتے ہوئے انہوں نے کہا کہ 105 گھر تباہ ہوئے جس میں ضلع نیلم میں 69، جہلم میں 11، حویلی میں 9، کوٹلی میں 8 اور 4، 4 گھر مظفرآباد اور پونچھ میں تباہ ہوئے۔

اس کے علاوہ 6 سو 22 گھروں کو جزوی نقصان پہنچا جس میں 226 گھر ضلع نیلم، 117 پونچھ، 94 کوٹلی، 90 حویلی، 63 بھمبر، 31 وادی جہلم اور ایک گھر مظفرآباد میں تھا۔گھروں کے علاوہ 74 دکانیں ضلع نیلم، 7 کوٹلی اور وادی جہلم، اور ضلع پونچھ میں ایک ایک دکان تباہ ہوئی۔ان کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی شیلنگ سے 15 گاڑیاں، 2 موٹر سائیکلز ضلع نیلم میں، 7 گاڑیاں پونچھ، 4 بھمبر، 2 کوٹلی اور ایک حویلی میں تباہ ہوئیں۔اس کے علاوہ ضلع نیلم میں ڈسٹرک ہیڈ کوارٹر ہسپتال اٹھمقام اور 3 اسکول، پونچھ میں ایک کالج اور بنیادی صحت کے ایک مرکز، کوٹلی میں 2ا سکولوں اور 8 مویشیوں کے باڑوں، بھمبر میں ایک اسکول اور مظفر آباد میں 3مویشیوں کے3 باڑوں کو نقصان پہنچا۔اس کے علاوہ وادی جہلم میں ایک مسجد کو بھی جزوی نقصان پہنچا۔

عہدیدار کا مزید کہنا تھا کہ صرف انسان اور املاک کو ہی نقصان نہیں پہنچا بلکہ نیلم، مظفرآباد، پونچھ، حویلی، کوٹلی اور بھمبر میں 106 مویشی بھی ہلاک ہوئے۔دوسری جانب آزاد کشمیر کے وزیراعظم راجہ فاروق حیدر نے لائن آف کنٹرول کے اطراف میں رہنے والوں کو لائن آف کنٹرل پر جنگ بندی کی صورت میں پیش آنے والی مشکلات کا سامنا کرنے پر ان کی ہمت کو سراہا۔ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ بھارت نے دونوں اطراف کے غیر مسلح کشمیریوں پر اپنی لڑاکا طاقت کا استعمال کر کے شہریوں کی ہلاکت سے اطمینان حاصل کرتا ہے۔یہ صورتحال اقوامِ متحدہ اور عالمی برادری کی فوری توجہ کی متقاضی ہے۔

شیئر کریں

Top