پیٹرولیم مصنوعات، بجلی اورایل پی جی قیمتوں میں حالیہ اضافہ عوام کے منہ سے آخری نوالہ چھیننے کے مترادف ہے۔کاشف شیخ

کراچی: جماعت اسلامی سندھ کے جنرل سیکریٹری کاشف سعید شیخ نے نام نہاد تبدیلی اور نئے پاکستان کی دعویدار پی ٹی آئی حکومت کی جانب سے بجلی،پیٹرولیم مصنوعات اور ایل پی جی کی قیمتوں میں اضافہ کرکےعوام کو نئے سال کا تحفہ دینے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے حکمرانوں کی مدینے کی ریاست نہیں بلکہ کوفے کی ریاست بنانے کی نوید قرار دیا ہے۔

انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ موجود حکومت نے گذشتہ سال چھ بار پیٹرول کی قیمت میں اضافہ جبکہ گیس اور بجلی کی قیمت میں بھی بار بار اضافہ کیا، ڈالر کی اونچی اڑان اور روپے کی بے قدری ،بھاری نئے قرضے لیکر آئی ایم ایف اور ورلڈ بینک کی ڈکٹیشن پر عوام کی زندگی اجیرن بناکر رکھ دی ہے، معاشی بہتری کی نوید سنانے والے حکمران اب عوام کے منہ سے آخری نوالہ بھی چھیننے کی منصوبابندی کرنے لگے ہیں،سال گذشتہ میں پیٹرول،گیس،بجلی، ادویات اور اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے نے شہریوں کو دن میں بھی تارے دکھادیئے،

عمران خان نے انتخابی جلسوں میں ”میں تمہیں رلاؤں گا” کا وعدہ سچ کرکے دکھایا اور پوری قوم کو خون کے آنسو رلادیئے ہیں، روزہ مرہ اشیائ کی قیمتوں میں تین گنا اضافے سے غریب اور متوسط طبقے کا گھریلو بجٹ تہس نہس ہوچکا، جبکہ حکمران حریم شاہ کے ساتھ سیلفیاں نکلواکر عوام کی زخموں پر نمک پاشی کرنے میں مصروف رہے،مہنگائی کی لہر نے چھپرا ہوٹل سے مزدور کی دال روٹی کھانے کی خوشی کو بھی ختم کردیا ہے، عام آدمی کیلئے فروٹ تو درکنار سبزیاں بھی خرید کرنا مشکل کردی گئیں ہیں،

انہوں نے مزید کہا کہ پیٹرول کی قیمتوں میں اضافے سے ٹرانسپورٹ کے کرایوں میں اضافہ سے ازخود ملک میں مہنگائی کا نیا طوفان آجاتا ہے ،عوام کی زندگی دن بدن بد سے بدتر ہوتی جارہی ہے، تبدیلی کے دعویداروں نے آج گیس، سی این جی جیسی سستی عوامی سہولت بھی چھین لی ہے، مدینے کی ریاست بنانے کے دعویدار حکمرانوں کے دور میں بچے بغیر ناشتے کے اسکول جانے پر مجبور اور شہروں میں بھی لکڑی اور گوبر جلانے کی رسم زندہ ہوچکی ہے۔

موجودہ حکومت گذشتہ 18مہینوں میں قومی خزانے کی کنجیاں آئی ایم ایف کے حوالے ،اشرافیہ کیلئے ریلیف اور عوام کی مشکلات میں اضافے کے سوا اور کچھ بھی نہیں کرسکی ہے، عوام مہنگائی میں پستے رہے ،مکانات مسمار اور حکمران غیرملکی سیرسپاٹوں میں مصروف ہیں،شاید حکومت روز بروز مہنگائی میں اضافہ کرکے 20کروڑ عوام کو سرکاری پناہ گاہ اور لنگرخانے میں پناہ دیکر ان کی مشکلات کو حل کرنا چاہتی ہے، انہوں نے مطالبہ کیا کہ حکومت عوام کی حالت زار پر رحم کرتے ہوئے پیٹرولیم مصنوعات اور بجلی کی قیمتوں میں حالیہ اضافہ فوری طور پر واپس لے۔

شیئر کریں

Top