آرمی ایکٹ ترمیمی بل پر جماعت اسلامی آئین وقانون کے ساتھ کھڑی ہے:جاوید قصوری

لاہور:امیرجماعت اسلامی صوبہ وسطی پنجاب و صدر ملی یکجہتی کونسل پنجاب وسطی محمد جاوید قصوری نے کہا ہے کہ آرمی ایکٹ ترمیمی بل پر جماعت اسلامی آئین وقانون کے ساتھ کھڑی ہے ۔

پسندوناپسند کی بنیاد پر اداروں کو کمزور نہیں جانا چاہیے ۔ جب بھی ملک وقوم پر مشکل وقت آیا ہم نے ہمیشہ ملکی دفاع کرنے والوں کا نہ صرف ساتھ دیا بلکہ ہزاروں قربانیاں بھی دیں ہیں ۔ جماعت اسلامی کل بھی اصولوں کے ساتھ تھی اورآج بھی اصولوں کے ساتھ کھڑی ہے ۔نظریہ ضرورت کو ہمیشہ کے لئے دفن کرناہو گا ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں گزشتہ روز تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ خود کو نظریاتی کہنے والے بھی کھل کر عوام کے سامنے آگئے ہیں ۔ حکومت کی یہ نااہلی ہے کہ وہ ایک نوٹیفکیشن بھی ٹھیک طرح سے جاری نہیں کرسکتی ۔ عدلیہ نے معاملے کو پارلیمنٹ کی طرف بھیجا ہے مگر قوم دیکھ رہی ہے کہ وہاں بھی عجلت کا مظاہر ہ کیا جارہا ہے ۔

ہم یہ سمجھتے ہیں کہ نا صرف حکومت اس قدر عجلت میں قانون سازی کرے گی تو اس کے نتیجے میں پوری پارلیمنٹ بے معنی ہو کر رہ جائے گی  بلکہ پارلیمنٹ کاتاثر ربڑ سٹمپ کے طورپر ابھر کر سامنے آئے گا ۔ ضرورت اس امرکی ہے کہ ملک کو آئینی اقدامات کے مطابق چلا یا جائے ۔ آرمی ایکٹ ترمیمی بل کے ذریعے حکومت مزید ایکٹینشنز کا راستہ کھول رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے جلد بازی ناقابل فہیم ہے مستقبل میں ججزاورسول بیوروکریسی بھی ایکٹینشن کی ڈیمانڈ کر سکتی ہے ۔

بلاشبہ فوج اورہمارے دیگر تمام دفاعی ادارے ملک وقوم کے لیے قابل فخر ہیں۔ اور ان سے ہی پاکستان کا استحکام جڑا ہو ا ہے ۔ محمد جاوید قصوری نے اس حوالے سے مزید کہا کہ اس قانون سازی کے نتیجے میں خدشہ ہے کہ مزید سقم پیدا ہو نگے اورآنے والی حکومتوں کے لیے مشکلات کا اضافہ ہو گا۔ حکومت کو چاہیے تھا کہ اس اہم ترین قانون سازی میں مشاورت کے ساتھ مکمل طورپر اتفاق رائے پیدا کرتی اورپھر چیزوں کو آگے لے کر جایاجاتا۔محض چنددنوں میں اہم ترین قانون سازی کسی دبائو کا نتیجہ لگتی ہے ۔

شیئر کریں

Top