پاکستان میں سونے کی قیمت میں 2600روپے فی تولہ اضافہ

اسلام آباد:ایران امریکا کے درمیان حالیہ کشیدگی کے نتیجے میں سونے کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے اور سونے کی قیمتیں 2600 روپے سے زائد کے اضافے کے ساتھ 93ہزار 400فی تولہ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔

عراق میں امریکی کارروائی کے دوران ایرانی جنرل سمیت 9افراد کی ہلاکت کے بعد مشرق وسطی میں حالات ہر گزرتے دن کے ساتھ کشیدہ ہوتے جا رہے ہیں۔اس غیریقینی صورتحال میں جہاں دنیا بھر میں اسٹاک مارکیٹ پر منفی اثر پرا وہیں تیل اور سونے کی قیمتوں میں بھی اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔پیر کو عالمی مارکیٹ میں سونے کی فی اونس قیمت 15ہزار 78ڈالر پر پہنچنے کے باعث مقامی سطح پر سونے کی قیمت 93ہزار روپے سے تجاوز کرگئی ہے۔دن میں ایک موقع پر سونے کی قیمتیں 5ماہ کی بلند ترین سطح 15ہزار 87ڈالر تک پہنچ گئیں

تاہم دن کے اختتام پر قیمتوں میں نسبتا استحکام دیکھنے کو ملا اور پیر کو دن کے اختتام پر فی اونس قیمت 15ہزار 78ڈالر رہی۔عالمی سطح پر سونے کی قیمتوں میں اضافے کا اثر مقامی مارکیٹ میں بھی دیکھنے کو ملا اور مقامی مارکیٹ میں فی تولہ سونے کی قیمت میں 26 سو روپے اضافہ ہوا جس کے بعد پاکستان میں سونے کی فی تولہ قیمت 93ہزار 400 روہے تک پہنچ گئی۔صرافہ ایسوسی ایشن کے صدر ہارون رشید چاند نے کہا کہ موجودہ عالمی صورتحال کے نتیجے میں سونے کی قیمتوں میں مزید اضافے کا امکان ہے اور قیمت 1600ڈالر فی اونس تک پہنچنے کا امکان ہے۔انہوں نے سونے کی قیمت میں اضافے کی وجہ بتاتے ہوئے کہاکہ جب کبھی بھی دنیا میں بحرانی حالات ہوتے ہیں تو لوگ سونے کو سب سے محفوظ تصور کرتے ہیں اس میں سرمایہ کاری کو ترجیح دیتے ہیں جس سے قیمت میں اضافہ ہوتا ہے۔

شیئر کریں

Top