پہلے آئینی صوبہ پھر الیکشن اے پی ایم ایل کا انتخابات کے بائیکاٹ کا اعلان

106814-apmllogowikipedia-1364170172-957-640x480-1.jpg

ہم احتجاجاً انتخابات کے بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہیں کیونکہ یہ الیکشن ایک ڈرامہ کے سوا کچھ بھی نہیں
مقتدر اداروں نے جی بی کو عبوری آئینی صوبہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے تو اس پر فوری عملدرآمد کرایا جائے،کریم خان
گلگت( جنرل رپورٹر) آل پاکستان مسلم لیگ نے انتخابات کے بائیکاٹ کا اعلان کر دیا۔ اے پی ایم ایل کے صوبائی سربراہ کریم خان عرف کے کے نے کہا کہ صوبہ سے پہلے الیکشن قبول نہیں ہے، پہلے صوبہ پھر الیکشن قبول ہے، صوبہ بنانے سے پہلے انتخابات ٹوپی ڈرامہ ہے۔ انہوں نے کہاکہ(باقی صفحہ7بقیہ نمبر19)
ہم احتجاجاً انتخابات کے بائیکاٹ کا اعلان کرتے ہیں کیونکہ یہ الیکشن ایک ڈرامہ کے سوا کچھ بھی نہیں، گلگت بلتستان کے عوام بہتر سالوں سے اپنے حقوق کیلئے ترس رہے ہیں اور جب مقتدر اداروں نے بھی جی بی کو عبوری آئینی صوبہ بنانے کا فیصلہ کیا ہے تو اس پر فوری عملدرآمد کرایا جائے۔ صوبہ نہ بننے سے گلگت بلتستان میں ترقیاتی کام جمود کا شکار ہیں، پارلیمنٹ میں نمائندگی نہ ہونے سے ہم اپنے دیرینہ مسائل کے حل سے قاصر ہیں۔ قومی اداروں میں نمائندگی عوام کا حق ہے اور اس حق کیلئے لوگ تہتر سالوں سے جدوجہد کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جولوگ الیکشن سے پہلے آئینی صوبے کی مخالفت کررہے ہیں وہ قومی مجرم ہیں، یہ لوگ اپنی ڈوبتی سیاست کو بچانے کیلئے عوام کو قربانی کا بکرا بنا رہے ہیں، ان حالات میں انتخابات کی کوئی اہمیت نہیں اس لیے ہم احتجاجاً الیکشن کا بائیکاٹ کرینگے اورآئندہ چند دنوں میں اگلے لائحہ عمل کا اعلان کیا جائے گا۔
آل مسلم لیگ

شیئر کریں

Top