پی ٹی آئی حکومت احتساب کی آڑ میں اپوزشن سے انتقام لے رہی ہے وہاب مرتضی

1399040111222559220631744.jpg

وفاقی حکومت گیس بحران پیدا کرکے صنعتکاروں اور عوام کا استحصال کررہی ، آئین کے مطابق گیس پر پہلا حق گیس پیدا کرنے والے صوبے کا ہے
سندھ حکومت کا پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ پروگرام احسن انداز سے کام کررہا ہے، کراچی، ٹھٹہ اور حیدرآباد، میرپورخاص ہائی وے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا منصوبہ ہے
کراچی(آئی این پی)سندھ حکومت کے ترجمان، مشیر قانون ، ماحولیات و ساحلی ترقی بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت احتساب کی آڑ میں اپوزیشن رہنماں سے انتقام لی رہی ہے۔ وفاقی حکومت گیس بحران پیدا کرکے ملک کے صنعتکاروں اور عوام کا استحصال کررہی ہے۔(باقی صفحہ6بقیہ نمبر49)
آئین پاکستان کے مطابق گیس پر پہلا حق گیس پیدا کرنے والے صوبے کا ہے سندھ ڈھائی ہزار ایم ایم سی ایف ڈی گیس پیدا کرتا ہے جبکہ اسے صرف نو سو سے ایک ایم ایم سے ایف ڈی گیس فراہم کی جاتی ہے جس کی وجہ سے نہ صرف صنعتی بلکہ گھریلو صارفین بھی مشکلات کا شکار ہیں۔ میری اپیل ہے کہ وزیراعظم اس بات کا فوری نوٹس لیں اور سندھ کو اس کا آئینی حق دیا جائے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کے روز نارتھ کراچی میں نو تعمیر شدہ سڑک کی افتتاحی تقریب اور نارتھ کراچی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری ( نکاٹی ) میں بحیثیت مہمان خصوصی خطاب اور بعدازاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس طرح کام کرنا ایک مثال ہے۔ سندھ حکومت کا پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ پروگرام احسن انداز سے کام کررہا ہے۔ کراچی، ٹھٹہ اور حیدرآباد، میرپورخاص ہائی وے پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کا منصوبہ ہے۔ ملیر ایکپسریس وے کا پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت اکتوبر میں سنگ بنیاد رکھا جائے گا یہ کام کی ابتدا ہے۔58 کروڑ روپے کی گرانٹ سندھ حکومت نے نکاٹی کو دی ہے نکاٹی نے بہترین طریقے سے اس پیسے کو خرچ کیا ہمیں اس طرح کے اور منصوبے بنانے کی ضرورت ہے۔پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ کے تحت نکاٹی کا ہر طرح سے ساتھ دیں گے۔ بیرسٹر مرتضی وہاب نے کہا کہ آئندہ پیر سے نارتھ کراچی صنعتی زون میں ہفتہ صفائی مہم شروع کرنگے نکاٹی کی طرح سے مدد کریں گے اس کے لیے سندھ حکومت اور میرا دفتر حاضر ہے۔انہوں نے کہا کہ پراپرٹی ٹیکس کو آسان طریقے سے حل کریں گے۔صوبائی حکومت نے جس طرح صنعتکاروں کے ساتھ کام کیا ہے وہ فقید المثال ہے۔ انہوں نے کہا کہ گیس بحران کو فوری طوری پر حل کرنے کی ضرورت ہے۔ وفاقی حکومت آئین پاکستان کے تحت گیس کا حق سندھ کو دے۔ سندھ 68 فیصد گیس پیدا کرتا ہے لیکن
صوبہ میں گھریلو اور کمرشل صارفین کو گیس نہیں مل رہی ہے۔ وفاقی حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے گیس بحران آیا ہے گیس نہیں ملے گی تو صوبے کی صنعتیں کیسے چلیں گی؟ وزیراعظم بلاتاخیر گیس بحران کا خاتمہ کریں سندھ حکومت صنعتکاروں کی ترجمانی کرے گی۔ حکومت ، عوام اور صنعتکار ملکر کام کریں گے تو عوام کے مسائل حل ہوں گے۔ وزیراعظم آئین کی شق 158 کے تحت سندھ کو اس کے حق کے مطابق گیس فراہم کرنے کا اعلان کریں گیس بحران کی صرف ایک وجہ نااہلی، نااہلی اور صرف نااہلی ہے۔ سندھ کی عوام کو کیوں آرایل این جی کی جانب جبرا منتقل کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ شیخ رشید نے ایک بار پھر یہ ثابت کردیا ہے کہ احتساب کے پیچھے نیازی ہے۔
مرتضی وہاب

شیئر کریں

Top