پاکستان نوجوان کا 8برس قبل قتل یونانی سیاسی جماعت دہشتگرد قرار
یونان میں پاکستانی نوجوان شہزاد لقمان کے قاتل قانون کی گرفت میں آ گئے،8 برس قبل فاشسٹ تنظیم کے اہلکاروں نے شہزاد لقمان کو بے دردی سے قتل کیا
ایتھنز(مانیٹرنگ ڈیسک)یونان کی عدالت نے 8 سال بعد پاکستانی نوجوان کے قتل کا فیصلہ سنادیا، عدالت نے قتل میں ملوث یونان کی چوتھی بڑی سیاسی جماعت کو دہشت گرد تنظیم قرار دیدیا، گولڈن ڈان نامی فاشسٹ جماعت کے اراکین نے 2012 میں شہزاد لقمان نامی نوجوان کو قتل کیا تھا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق یونان میں پاکستانی نوجوان شہزاد لقمان کے قاتل قانون کی گرفت میں آ گئے،8 برس قبل فاشسٹ تنظیم کے اہلکاروں نے شہزاد لقمان کو بے دردی سے قتل کیا تھا۔قتل میں ملوث یونا(باقی صفحہ 6بقیہ نمبر2)
ن کی چوتھی بڑی سیاسی جماعت کو سپریم کورٹ نے دہشت گردتنظیم قرار دے دیا۔ گولڈ ن ڈان نامی تنظیم پاکستانیوں اور دیگر تارکین وطن پر تشدد میں ملوث تھی، سیاسی جماعت کی اعلی قیادت کو کمرہ عدالت سے ہی حراست میں لیا گیا۔عدالتی فیصلے کے حق میں سپریم کورٹ کے باہر ہزاروں شہریوں نے جشن منایا، یونانی وزیر اعظم نے فیصلے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے اسیریاست اور عوام کی فتح قرار دیا۔یاد رہے کہ 1993 میں قائم ہونے والی سیاسی جماعت ہٹلر اور دیگر نازی رہنماں کے نظریات سے متاثر تھی

شیئر کریں

Top