گلگت بلتستان الیکشن ہمارے لئے اہم ہے انتخابی مہم کی نگرانی خود کروں گا بلاول بھٹو

1917871-bilawal-1576408894.jpg

عبوری آئینی صوبہ پاکستان پیپلزپارٹی کے منشور کا حصہ ہے جس پر تمام سٹیک ہولڈرز میں اتفاق رائے پایا جاتا ہے،عوام کے جذبات کااحساس ہے
شفاف الیکشن کے انعقاد کو یقینی بنایا جائے،گلگت بلتستان کے انتخابات ملکی اور بین الاقوامی سطح پر میڈیا کی توجہ کا مرکز ہونگے،اجلاس سے خطاب
گلگت(بادشمال نیوز)پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کی زیر صدارت ویڈیو لنک کے ذریعے پارٹی کے شعبہ (باقی صفحہ7بقیہ نمبر4)
اطلاعات اور پارٹی ترجمانوں کا اہم اجلاس منعقد ہوا اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہمارے لئے گلگت بلتستان کی عوام اور وہاں ہونے والے انتخابات بہت اہمیت رکھتے ہیں ہمیں ان کے احساسات اور جذبات کا خیال رکھنا ہوگا ہمیں ان کی سیاست کو مدنظر رکھتے ہوئے ان کی خواہشات کے مطابق ترجمانی کرنی ہوگی اسی لئے عبوری آئینی صوبہ پاکستان پیپلزپارٹی کے منشور کا حصہ ہے جس پر آج تمام سٹیک ہولڈرز میں اتفاق رائے پایا جاتا ہے گلگت بلتستان کے انتخابات کی خود نگرانی کرتے ہوئے الیکشن کمپین کو لیڈ کروں گا گلگت بلتستان کے انتخابات ملکی اور بین الاقوامی سطح پر میڈیا کی توجہ کا مرکز ہونگے اسی لئے گلگت بلتستان میں صاف شفاف الیکشن کے انعقاد کو یقینی بنایا جائے اجلاس میں پارٹی کی میڈیا اسٹریٹجی سمیت مختلف امور پر بات چیت کی گئی جس میں مرکزی اور تمام صوبائی انفارمیشن سیکرٹریز نے اپنے اپنے صوبوں کی صورتحال پر تفصیلی بریفنگ دی اجلاس میں پی ڈی ایم کی حکومت مخالف تحریک سمیت دیگر امور پر غور کیا گیا چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے پارٹی رہنماؤں کو ہدایت دی کہ وہ پی ڈی ایم کی تحریک کیلئے عوامی رابطہ مہم تیز کریں۔اجلاس میں پاکستان پیپلزپارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سینیٹر مولا بخش چانڈیو، مرکزء ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات چوہدری منور انجم، پیپلزپارٹی پارلیمنٹرین کی سیکرٹری اطلاعات ڈاکٹر نفیسہ شاہ اور ڈپٹی سیکرٹری اطلاعات پلوشہ خان نے شرکت کی اجلاس میں پاکستان پیپلزپارٹی بلوچستان کے سیکرٹری اطلاعات سردار سربلند خان جوگیزئی،سندھ کے سیکرٹری اطلاعات سینیٹر عاجز دھامرہ،خیبرپختونخوا کی سیکرٹری اطلاعات سینیٹر روبینہ خالد نے بھی شرکت کی اجلاس میں گلگت بلتستان کی سیکرٹری اطلاعات سعدیہ دانش، سینٹرل پنجاب کے ڈپٹی سیکرٹری بیرسٹر عامر حسن بھی شریک تھے۔اجلاس میں سید ناصر حسین شاہ،سعید غنی،سسی پلیجو،شرجیل انعام میمن،مرتضی وہاب،گوہر انقلابی،حافظ نعیم، شہزاد سعید چیمہ اور نزیر ڈھوکی بھی موجود تھے۔

شیئر کریں

Top