اسیران ہنزہ رہائی کمیٹی کا احتجاج دھرنا جاری چہلم جلوس شرکاء کا بھی اظہار ہمدردی

114791371_a0cbf2a7-c5d3-467a-a241-5b605591be10.jpg

فوری طور پر 14بے گناہ اسیران کو رہا کیاجائے ریاست ظلم اور زیادتی بند کریں،ہماری خاموشی کوکمزوری نہ سمجھاجائے،موسی کریمی
رہا نہ کرنے کی صورت میں احتجاج صرف ہنزہ نہیں بلکہ پاکستان اور عالمی سطح پرہو گا پھر عالمی برادری اس کا نوٹس لیگی،خطاب
ہنزہ(بیورورپورٹ)اسیران ہنزہ رہائی کمیٹی کے زیر اہتمام احتجاج اور دھرنا چوتھے روز بھی جاری رہا عوام نے جوق در جوق اس احتجاج میں شرکت کی چہلم کے عزاداران نے بھی احتجاج میں شرکت کرکے اسیران کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا چہلم کا جلوس ہزاروں کی تعداد میں اسیر (باقی صفحہ7بقیہ نمبر3)
رہنماؤں دھرنے میں پہنچ گیا امام جمعہ و جماعت اور خطیب علی مسجد موسی کریمی نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فوری طور پر 14ا بے گناہ اسیران کو رہا کیاجائے ریاست ہنزہ کے ساتھ ظلم اور زیادتی بند کریں ہمارے امن پسندی کو بزدلی نہ سمجھے انھوں نے کہا یہ ظلم صرف چودہ فیملز کے ساتھ نہیں بلکہ ہنزہ کے ساتھ روا رکھی گئی ہے انھوں نے کہا کہ جیل میں بند قیدی بے گناہ ہے اس کا میں عینی شاید ہوں دو افراد کو قتل بھی کیا گیا اور ہنزہ کے نوجوانوں کو پابند سلاسل بھی کیا گیا انھوں نے کہا کہ فوری طور ہنزہ کے نوجوانوں کو رہا کیا جائے نہ کرنے کی صورت میں یہ احتجاج صرف ہنزہ میں نہیں بلکہ گلگت بلتستان اور پاکستان اور انٹرنیشنل لیول پر جائے گی عالمی برادری اس کا نوٹس لے گی اس لئے ریاست کو چاہے کہ ہنزہ کے نوجوانوں کو فوری رہا کیا جائے نواز خان ناجی بی این ایف کے چیرمین اور امیدوار صوبائی اسمبلی نے بھی غزر سے اسیر قیدوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لئے علی اباد پہنچ گئے ان کے ساتھ بڑی تعداد میں غزر سے عوام نے شرکت کی احتجاجی دھرنے سے خطاب کرتے ہوئے نواز خان ناجی نے کہا کہ ہنزہ کے ان چودہ قیدیوں کے ساتھ ظلم اور بربریت ختم ہونا چاہے یہ چودہ افراد بے گناہ ہیں ان کے ساتھ ریاست کا یہ سلوک افسوس ناک ہے فوری رہا کیا جائے ہنزہ کے عوام پر امن ہیں ان کے امن پسندی کو بزدلی نہ سمجھا جائے ہنزہ والے ڈھول کی تھاپ پر وقت گزارتے ہیں تو یاد رکھو یہ لوگ تمہارا چمڑا اتار کر اس کا ڈھول بھی بنا سکتیہیں۔ نواز خان ناجی کا حکومت کو للکار۔

شیئر کریں

Top