چہلم امام حسین ؓؓ پر شیعہ سنی رواداری اور تعون مثالی تھا آغا راحت

n00883830-b.jpg

اسلام دشمن طاقتیں فرقہ وارانہ نفرتیں پھلانے کی بھر پور کوششوں کے باوجود شیعہ سنی میں اشتعال انگیزی پھیلانے میں کامیاب نہ ہو سکے
سانحہ ہنزہ اور 13 اکتوبر جیسے واقعات پر نشانہ عبرت بنانے کی کوشش کی جارہی ہے جلد رہائی کے لیے حکمت عملی واضح کرینگے
گلگت(بیورورپورٹ)خطیب مرکزی امامیہ جامع مسجد گلگت آ غا راحت حسین الحسینی نے کہا ہے کہ سوشل میڈیا میں فرقہ وارانہ کشیدہ ماحول میں اہلسنت کا چہلم امام حسین کے جلوس میں تعاون اور رواداری مثالی تھا جمعہ کے خطبے میں انہوں نے کہاکہ اسلام دشمن طاقتیں فرقہ وارانہ نفرتیں پھلانے(باقی صفحہ7بقیہ نمبر3)
کی بھر پور کوششوں کے باوجود شیعہ سنی میں کسی قسم کی اشتعال انگیزی پھیلانے میں کامیاب نہ ہو سکے جس کے باعث چہلم امام حسین پرامن ،مثالی اخوت و بھائی چارے کے خوشگوار ماحول میں اختتام پذیر ہوا جس پر اہلسنت لائق تحسین ہے انہوں نے چہلم میں کسی قسم کی رکاوٹ اور تنازعہ پیدا ہونے نہیں دیا اس کے ساتھ اسماعیلی بھائیوں کا روایت کے مطابق بھرپور تعاون اور رواداری کا مظاہرہ کر کے اتحاد بین المسلمین کا شاندار مثال قائم رکھا جلوس چہلم میں انتظامیہ سکاٹس پولیس اور دیگر سیکورٹی فورسز کے شاندار اور فل پروف سیکورٹی کے انتظامات پر ہم کردار کو سراہتے ہیں آ غا راحت حسینی نے ہنزہ میں قیدیوں کے لیے جاری دھرنے کی مکمل حمایت کی اور بابا جان سمیت قیدیوں کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا اور کہا بڑے دہشت گردوں کو چھوٹ دی جارہی ہے اور سانحہ ہنزہ اور 13 اکتوبر جیسے واقعات پر نشانہ عبرت بنانے کی کوشش کی جارہی ہے جلد 13 اکتوبر کے اسیروں کی رہائی کے لیے حکمت عملی واضح کرینگے
آغا راحت

شیئر کریں

Top