پیپلز پارٹی نے 6 مزید حلقوں کیلئے امیدوار کو ٹکٹ جاری کر دئے نظام کے خلاف بھر پور احتجاج کیلئے تیار ہیں بلاول بھٹو

1917871-bilawal-1576408894.jpg

دیامر 4تانگیر سعدیہ دانش، نگر ایک مرزا حسین،سکردو 4 روندو وزیر محمد خان،کھرمنگ نیاز علی ،استور 2 مظفر ریلے اور غذر 2 سے علی مدد شیر پیپلزپارٹی کے امیدوار ہونگے
حکومت کیخلاف سیاسی جماعتیں اکٹھی ہو چکی ہیں ، حکومت کا بوجھ برداشت نہیں کر سکتا، حکومت کے دن گنے جا چکے،ہم صوبے کا ایک ٹکڑا بھی غیر قانونی طریقے سے لینے نہیں دیں گے
کراچی (آئی این پی)پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوگئی، اب عمران خان کو گھر جانا پڑے گا،حکومت کے خلاف سیاسی جماعتیں اکٹھی ہو چکی ہیں ،اس حکومت کو ختم کر کے رہیں گے، ملک اب اس حکومت کا بوجھ برداشت (باقی صفحہ7بقیہ نمبر6)
نہیں کر سکتا، حکومت کے دن گنے جا چکے، ہم صوبے کا ایک ٹکڑا بھی غیر قانونی طریقے سے لینے نہیں دیں گے، حکومت اپنی غلطی تسلیم کرے اور آرڈیننس واپس لے، پوری کابینہ کرپٹ ہے، ایمنسٹی انٹرنیشنل نے کہا ہے کہ عمران خان کی حکومت سب سے زیادہ کرپٹ ہے، ملک کی تاریخ میں عمران خان سب سے زیادہ کرپٹ ترین ہیں، پنجاب میں عثمان بزدار ،دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں اور کہتے ہیں کہ کرپٹ نہیں ہیں،آج عمران خان فوج سے اس لئے خوش ہیں کہ وہ رائٹ سائیڈ پر ہیں، کل جب رائٹ لائیڈ پر نہیں ہوں گے تو پھر ہم دیکھ لیں گے، مولانا فضل الرحمان کی اپنی سیاست اور اپنی جماعت ہے جبکہ دیگر جماعتیں اپنے منشور کے مطابق اپنی تحریکیں چلا رہی ہیں۔ جمعہ کو پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ یہ ملک معاشی ، خارجہ، صحت اور ہر جگہ اس لئے ناکام رہا ہے کیونکہ ایک نالائق، نااہل اور سلیکٹڈ کو مسلط کر دیا گیا ہے، سلیکٹڈ میں کوئی صلاحیت نہیں ہے کہ وہ ملکی مسائل کو حل کر سکے، سندھ کے حقوق پر حملے کی مذمت کرتے ہیں اور برداشت نہیں کرتے ہیں غیر قانونی آئی اینڈ آرڈیننس کو فی الفور واپس لیاجائے۔ انہوں نے کہا کہ جب ایک کرکٹر کو وزیراعظم بنایا جاتا ہے تو کیا کیا نقصان ہوتا ہے، یہ لوگوں کو معلوم نہیں ،وفاقی نظام تباہ ہو جاتا ہے، حکومت اپنی غلطی تسلیم کرے اور آرڈیننس واپس لے، ہم صوبے کا ایک ٹکڑا بھی غیر قانونی طریقے سے لینے نہیں دیں گے، یہ غیر جمہوری رویہ ہے۔ بلاول زرداری نے کہا کہ ملک اب اس حکومت کا بوجھ برداشت نہیں کر سکتا، عمران خان کو اب گھبرانا ہو گا،آزاد کشمیر کے وزیراعظم پر غداری کا مقدمہ بنانا اس کی سب سے بڑی غلطی ہے، عوام کو دیوار سے لگا دیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی نے پہلے دن سے اس حکومت اور سہولت کاروں کے خلاف آواز اٹھائی ہے، ہم جمہوری اور قومی حکومت چاہتے ہیں، اس حکومت کے دن گنے جا چکے ہیں، پارلیمان کو ربڑ سٹیمپ بنادیا گیا ہے، آمرانہ طریقہ کار سپیکر قومی اسمبلی نے اپنایا ہے، میڈیا میں ہمارے انٹرویوز پر پابندی لگا دی جاتی ہے، جلسوں پر انتقامی کاروائیاں ہوتی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس حکومت کے خلاف سیاسی جماعتیں اکٹھی ہو چکی ہیں اور اس حکومت کو ختم کر کے رہیں گے، ہم عوامی مسائل حل کریں گے، ہم نے اب اپنے عوام کے حقوق کا تحفظ کرنا ہے، حکومت کو صوبوں پر قبضے کی اجازت نہیں دے سکتے ہیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کو فوج کو سیاسی طور پر استعمال نہیں کرنا چاہیے، ہر جگہ فوج کو نہیں لانا چاہیے کیونکہ فوج کسی ایک جماعت کی فوج نہیں۔
بلاول بھٹو

شیئر کریں

Top