انڈر 19 قومی ون ڈے کپ آج سے وشروع ہو گا

Crickey.jpg

21روزہ ایونٹ کی فاتح ٹیم کو دس لاکھ، رنرز اپ کو پانچ لاکھ روپے انعام دیا جائے گا،ٹورنامنٹ کے بہترین کھلاڑی، بیٹسمین، وکٹ کیپر اور باؤلر کو 50،50 ہزار روپے بطور انعام ملیں گے
پہلے روز 3میچز کھیلے جائیں گے ،سنٹرل اور سدرن کی ٹیمیں قذافی اسٹیڈیم لاہور، ناردرن اور خیبرپختونخوا کی ٹیمیں مریدکے کنٹری کلب ، بلوچستان اور سندھ کی ٹیمیں ایل سی سی اے گراؤنڈ لاہور میں مدمقابل آئیں گی
لاہور(آئی این پی)کورونا وائرس کی وباء کے باوجود پاکستان کے ڈومیسٹک سیزن 21۔2020 میں شامل مینز اور ویمنز کرکٹ کی سرگرمیوں کے بعد اب ایج گروپ کرکٹ کابھی (آج)منگل سے آغاز ہونے جارہا ہے۔ اس سلسلے میں یکم ستمبر2001 یا اس کے بعد پیدا ہونے والے کھلاڑیوں کے درمیان ایک روزہ طرز کی کرکٹ کے مقابلے 13 اکتوبر سے لاہور، مریدکے اور شیخوپورہ میں شروع ہوں گے۔اکیس روزہ ایونٹ کا فائنل 2 نومبر کو کھیلا جائے گا، جہاں سندھ انڈر19 کرکٹ ٹیم ایونٹ میں اپنے ٹائٹل کا دفاع کرے گی۔ ڈبل لیگ کی بنیاد پر کھیلے جانے والے ایونٹ میں کْل بیس لاکھ (باقی صفحہ 6 بقیہ نمبر8)
روپے سے زائد کی رقم تقسیم کی جائے گی۔ ایونٹ کی فاتح ٹیم کو دس لاکھ جبکہ رنرزاپ کو پانچ لاکھ روپے کی انعامی رقم دی جائے گی۔ ایونٹ کے بہترین کھلاڑی، بہترین بیٹسمین، بہترین وکٹ کیپر اور بہترین باؤلر کو پچاس پچاس ہزار روپے انعام دیا جائے گا۔ٹورنامنٹ میں کْل تیس لیگ میچز کھیلے جائیں گے ، جہاں ہر میچ کے بہترین کھلاڑی کو د س ہزار روپے اور مین آف دی فائنل کو بیس ہزار روپے انعام دیا جائے گا۔ایونٹ کے پہلے روزپنجاب کی دونوں انڈر 19 ٹیمیں (سنٹرل اور سدرن) کے درمیان میچ قذافی اسٹیڈیم لاہورمیں ہوگا۔ اسی طرح ناردرن اور خیبرپختونخوا کی انڈر19 ٹیمیں مریدکے کنٹری کلب جبکہ بلوچستان اور سندھ کی انڈر19 ٹیمیں ایل سی سی اے گراؤنڈ لاہور میں مدمقابل آئیں گی۔چھ کرکٹ ایسوسی ایشنز کے اسکواڈزمیں شامل نوجوان کرکٹرز کے بائیو سیکیور ماحول میں کرکٹ کا یہ تجربہ نیا ضرور ہوگا ، جہاں کوورونا وائرس کے پروٹوکولز پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے گا۔ایونٹ کے لیے چھ کرکٹ ایسوسی ایشنز کیاسکواڈز کا انتخاب اوپن ٹرائلز کے بعد کیا گیا ہے۔ 16سے 19 ستمبر تک منعقدہ ٹرائلز میں ملک بھر سے تعلق رکھنے والے تقریباً 7ہزار نوجوان کھلاڑیوں نے شرکت کی۔بلوچستان انڈر 19 کرکٹ ٹیم کے کپتان محمد ابراہیم سینئرکا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کی وبائ[L:4 R:4] کے سبب کئی ماہ ملک میں کھیلوں کی سرگرمیاں معطل رہیں تاہم پی سی بی کی جانب سے مینز اور ویمنز کرکٹ کے بعد اب مختلف ایج گروپ کرکٹ کیمقابلوں کے آغاز پر وہ بہت خوش ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اکیس روزہ ایونٹ کے آغاز سے قبل لاہور میں لگائے گئے ٹریننگ کیمپ میں سخت ٹریننگ نے کھلاڑیوں کو ردھم میں واپس آنے کا اچھا موقع فراہم کیا ہے۔سنٹرل پنجاب انڈر19 کرکٹ ٹیم کے کپتان محمد حریرہ کا کہنا ہے کہ بائیو سیکیور ببل میں پہلی مرتبہ کرکٹ کھیلنے کا تجربہ نیا ہے تاہم کھلاڑی گراؤنڈ میں ٹریننگ کے ساتھ ساتھ اب ہوٹل میں انڈور گیمز کھیل کر خود کو مصروف رکھے ہوئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ جب کورونا وائرس کے باعث دنیا بھر میں کھیلوں کی سرگرمیاں متاثر ہوئیں تو ا ن حالات میں پاکستان کرکٹ بورڈ کا ایج گروپ کرکٹ کے مقابلوں کا آغاز کرنا خوش آئند ہے۔خیبرپختونخوا انڈر 19 کرکٹ ٹیم کے کپتان عباس علی کا کہنا ہے کہ ایونٹ کے آغاز سے قبل قذافی اسٹیڈیم لاہور اور نیشنل ہائی پرفارمنس سنٹر کی بہترین سہولیات میں ٹریننگ کرنے پر وہ بہت خوش ہیں۔ عباس علی نے کہا کہ گزشتہ سال قومی انڈر 16 کرکٹ ٹیم کی نمائندگی کرنے والے متعدد کرکٹرز اس مرتبہ خیبرپختونخوا انڈر19 کرکٹ ٹیم کی نمائندگی کررہیہیں، لہٰذا انہیں اپنی ٹیم سے ایونٹ میں بہترین کارکردگی کی امید ہے۔ناردرن انڈر 19 کرکٹ ٹیم کے کپتان محمد رضا المصطفیٰ کا کہناہے کہ ان کی ٹیم میں اچھے بیٹسمین اور بہترین فاسٹ باؤلرز موجود ہیں، انہیں اپنی ٹیم پر مکمل بھروسہ ہے کہ وہ ٹائٹل جیتنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ تمام ٹیمیں متوازی ہیں اور انہیں ایونٹ میں سخت مقابلوں کی امید ہے۔دفاعی چیمپئن سندھ انڈر19 کرکٹ ٹیم کے کپتان صائم ایوب کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے باوجود پاکستان کرکٹ بورڈ کی جانب سے ایونٹ کے انعقاد کو یقینی بنانے پر وہ پی سی بی کے مشکور ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ ایونٹ کے دوران کوویڈ19 پروٹوکولز پر مکمل عمل کرنے کی کوشش کریں گے۔صائم ایوب پرامید ہیں کہ سندھ ایونٹ میں اپنے ٹائٹل کا بھرپور دفاع کرے گی اور دفاعی چیمپئن کی حیثیت سے میدان میں اترنے کے باعث تمام کھلاڑی پراعتماد ہیں۔سدرن پنجاب انڈر19 کرکٹ ٹیم کے کپتان محمد شہزاد کا کہنا ہے کہ ان کی ٹیم بہترین کھلاڑیوں پر مشتمل ہے اور وہ ایونٹ میں جارحانہ حکمت عملی اپنائے میدان میں اتریں گے۔ محمد شہزاد کا کہنا ہے کہ کورونا وائرس کے وقفے کے بعد دوبارہ سے کرکٹ کی سرگرمیوں کی بحالی کے باعث ہر کھلاڑی ٹائٹل جیتنے کے لیے سردھڑ کی بازی لگادے گا۔
ون ڈے کپ

شیئر کریں

Top