سکردو مسافر کوچ پر تودہ گرنے سے16افراد جاںبحق

g13-1.jpg

مسافر کوچ راولپنڈی سے سکردو آرہی تھی تنگوداس کے مقام پر پہاڑی تودہ آگرا جاں بحق ہونے والوں میں ۶ سکیورٹی اہلکار بھی شامل ہیں
سکردو،مسافر کوچ تودہ گرنے کے بعد ملبے تلے دبی ہے، ریسکیو اہلکار امدادی سرگرمیوں میں مصروف ہیں، زیر نظر تصویر میں پاک فوج کے جاں بحق ہونے والے جوانوں کی فائل فوٹو
سکردو(محمد حسین آزاد،غلام علی وفا)گلگت سکردو روڈ پر لینڈ سلائیڈنگ کے باعث مسافر کوچ پہاڑی تودے کی زد میں آکر دب گئی ، المناک حادثے میں 16 افراد جاں بحق ہوگئے، ریسکیوآپریشن کے زریعے تمام جاں بحق افراد کی لاشیں نکال لی گئیں ، ایس ڈی پی او روندو ڈی ایس پی محمد حسن کے مطابق اتوار کی صبح 5 بجے تونگوس روندو کے مقام پر راولپنڈی سے سکردو جانے والی نجی کمپنی کی کوسٹر پر بھاری پہاڑی تودہ آگرا اور کوسٹر پہاڑی ملبے دب گئی جس کے نتیجے میں ڈرائیور ، کنڈیکٹر اور ایک خاتون سمیت 16 افراد جاں بحق ہوگئے، ریسکیو ،1122 اور مقامی پولیس سمیت مقامی رضاکاروں نے ایف ڈبلیو او کی مدد سے کئی گھنٹوں کیریسکیو آپریشن کے بعد تمام جاں بحق افراد کی لاشیں ملبے سے نکال کر آر ایچ کیو ہسپتال سکردو پہنچا دیں ، جہاں سے شناخت کے بعد لاشیں ان کے ورثا اور لواحقین کے حوالے کی گئیں،تفصیلات کے مطابق اتوار کے روز الصبح نجی کمپنی کی کوسٹرمسافروں کوسکردولیکرراولپنڈی جارہی تھی شاہراہ جگلوٹ سکردو پر سب ڈویژن روندو تنگوس پڑی کے مقام پر پہاڑی تودے تلے دب گئی حادثہ کی اطلاع ملتے ہی روندو اور سکردو سے امدادی ٹیمیں اور ریسکیو اہلکاروں نے جائے حادثہ پہنچ کر امدادی کارروائیاں شروع کردیں امدادی کارروائی میں ریسکیو 1122، ایف ڈبلیو او اور دیگر انتظامی اداروں کے اہلکاروں نے حصہ لیا کمشنر بلتستان ڈویژن عمران علی، ڈپٹی کمشنر سکردو ڈاکٹر محمد انس اقبال، ایس ایس سکردو اسحاق حسین، ایس ڈی پی او روندو محمد حسن، اسسٹنٹ کمشنر روندو سمیت دیگر انتظامی حکام امدادی کارروائیوں کی نگرانی کی، ایس ڈی پی او روندو محمد حسن کے مطابق اس المناک حادثہ میں جاں بحق ہونیوالوں میں ایک خاتون، دو بچے ،ایک ڈاکٹر، چھ سیکورٹی اہلکار اور بدقسمت کوسٹر کا ڈرائیور اور کندیکٹر شامل ہیں۔
جاں بحق

شیئر کریں

Top