ایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو گرے لسٹ میں برقرار رکھنے کا فیصلہ

images-2.jpg

پاکستان کا نام ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں شامل رہے گا، پاکستان نے 27میں سے 21نکات پر عمل درآمد کیا
باقی 6نکات پر عمل درآمد کرنا پڑیگا، پاکستان فی الحال فروری 2021تک گرے لسٹ میں رہے گا ،صدر ایف اے ٹی ایف
پیرس(آئی این پی)فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف)نے پاکستان کو گرے لسٹ میں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔ایف اے ٹی ایف کا 3 روزہ ورچوئل اجلاس ہوا جس میں منی لانڈرنگ اور ٹیرر فنانسگ کے خلاف پاکستان کے اقدامات کا جائزہ لیا گیا۔ورچوئل اجلاس کے اختتام پر پریس کانفرنس کی گئی جس میں صدر ایف اے ٹی ایف مارکس پلیئر نے بتایا کہ پاکستان کا نام ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں شامل رہے گا جب کہ پاکستان نے 27میں سے 21نکات پر عمل درآمد کیا ہے تاہم پاکستان کو باقی 6 نکات پر عمل درآمد کرنا پڑے گا۔ان کاکہنا تھا کہ پاکستان فی الحال فروری 2021تک گرے لسٹ میں رہے گا اور اگلے اجلاس سے پہلے چیک کریں گیکہ پاکستان نے ان نکات پر مثر طریقے سے عملدرآمد کررہا ہے یا نہیں۔خیال رہے کہ پاکستان کا نام جون 2018 سے فیٹف کی گرے لسٹ میں شامل ہے۔ رواں سال فروری میں ایف اے ٹی ایف نے پاکستان کو جون تک گرے لسٹ میں ہی برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا تھا۔فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کے ارکان کی تعداد 37 ہے جس میں امریکا، برطانیہ، چین، بھارت اور ترکی سمیت 25 ممالک، خلیج تعاون کونسل اور یورپی کمیشن شامل ہیں۔
گرے لسٹ

شیئر کریں

Top