انصاف کرکٹ ٹورنامنٹ شکیوٹ کے نام

images.jpeg

گلگت(سپیشل رپورٹر)انصاف کرکٹ ٹورنامنٹ طویل مدت کے بعد امن و بھاء چارہ گی کے ساتھ اختتام پذیر ہوء اس ٹورنامنٹ میں 25 ٹیمیں جس میں گلگت جوٹیال سکورا سے لیکر غزر گاہکوچ تک کی ٹیموں نے حصہ لیاتھا فائنل میچ میں مہمان خصوصی تحریک انصاف کے نامزد امیدوار گلگت بلتستان اسمبلی حاجی جوہر علی تھے جنہوں نے علاقے کی امن اور بھاء چارہ گی کا ماحول دیکھ کر نوجوانوں کی تعریف کی اور اپنے حلقے کے لوگوں کو ترقیاتی کام کرنے کی یقین دہانی کرائی اس فائنل میچ میں شکیوٹ ورکشاپ الیون بمقابلہ بسین زلمی کے درمیان کانٹے دار مقابلہ ہوا جس جس میں شکیوٹ ورکشاپ الیون نے 11 اوورز میں 145 رن کا ہدف دیا جس میں مہمان ٹیم زلمی بسین 106 رنز پر ڈھیر ہوگئی فاتح ٹیم شکیوٹ ورکشاپ الیون کے آل رانڈر باسط پاشا نے 65 رنز کے ساتھ 5 وکٹیں لیکر مین آف دی میچ قرار پائے جب کہ مین آف دی سیریز مہمان ٹیم بسین زلمی الیون کے مایہ ناز آل راونڈر عمران احمد کو دیا گیا ان خیالات کا اظہار کرتے ہوئے شکیوٹ ورکشاپ الیون کے کوچ محمد زمان کنگ نے کہا ہماری اس فائنل تک رساء دلانے والے ہمارے باولرز ہیں اسپیشلی کمیل سلطان اور آفاق احمد ہیں جنکی بھرپور محنت اور کوشش سے آج ہمیں فتح حاصل ہوا انہوں نے مزید کہا کہ کپتان عمیر احمد کی جارحانہ انداز میں کیپٹنسی قابل تعریف ہے جنہوں نے محنت اور ٹیکنیکل انداز میں کھلاڑیوں کو چلایا انہوں نے مذید کہا کہ شکیوٹ ورکشاپ الیون کے بلے باز شیراز احمد نے 3 میچز میں 160 رنز بنا کر اس ٹورنامنٹ میں ریکارڈ بنایا جو کہ اس سے پہلے کسی بھی کھلاڑی نے اتنا سکور نہیں کیا تھا انہوں نے کہا کہ بسین زلمی اتنی آسان ٹیم نہیں تھی ہمارے کھلاڑیوں نے بھرپور (باقی صفحہ6بقیہ نمبر5)
مظاہرہ کرتے ہوئے ان سے فتح چھین لی وہ بھی قابل تحسین ہیں جنہوں نے فائنل تک رسائی حاصل کیا انہوں نے مہمان ٹیم سپورٹس کمیٹی سمیت علاقے کے تمام لوگوں کا شکریہ ادا کیا جنہوں نے اس ٹورنامنٹ میں مزے دار اور امن کا ماحول پیداکیا ۔

شیئر کریں

Top