وزیر اعظم وفاقی وزارء کا متوقع دورہ الیکشن کمیشن دباؤ کا شکار

unnamed-1-2.jpg

ضابظہ اخلاق ہو میں تحلیل
گلگت(بیورو رپورٹ)وزیر اعظم کیساتھ وفاقی وزراء کے گلگت بلتستان کے متوقع دورے کے شیڈول نے الیکشن کمیشن کی عملداری کو امتحان میں ڈال دیا اور بڑوں کی لڑائی سے الیکشن کمیشن شدید دباؤ کا شکار ہونے کے بعدانتخابی ضابطہ اخلاق پر عملدرآمد میں مکمل طورپرناکام دکھائی دینے لگا جس سے انتخابات کی غیر جانبداری اور شفافیت بھی مشکوک ہو گئی ہے اس اقدام پرسیاسی جماعتوں نے بھی شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے الیکشن کمیشن کی حیثیت پر سوالات اٹھا دیئے بلاول بھٹو کی مختلف حلقوں میں انتخابی مہم کے بعد وزیراعظم اور وزیر امور کشمیر نے بھی اپنے دورے کے شیڈول جاری کر کے الیکشن ایکٹ 2017 میں دئیے گئے ضابطوں کو سوالیہ نشان بنا دیا اور الیکشن کمیشن کی طرف سے پسپائی اختیار کرنے کے بعد قانون کی بالادستی سنگین مسئلہ بن گئی دوسری طرف دیامر کے ریٹرننگ افسر نے وزیر امور کشمیر کے دورے کے خلاف فیصلے کو 24 گھنٹے بعد واپس لیکر انتخابات کی شفافیت اور غیر جانبداری کو غیر یقینی صورتحال سے دوچار کر دیا اپوزیشن جماعتوں کو انتخابات کی قانونی حیثیت کے بارے میں سنجیدہ سوالات اٹھانے کاموقع مل گیاہے۔
تحلیل

شیئر کریں

Top