پاکستان کیلئے پارلیمانی نظام ہی بہتر ہے ،احسن اقبال

Ahsan-Iqbal-1280x720-1.jpg

ہمیں ادھر اُدھر دیکھنے کی بجائے اپنے نظام کو چلانا چاہیے، نجی ٹی وی سے گفتگو
اسلام آباد(آئی این پی )پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا کہ پاکستان کیلئے وفاقی پارلیمانی نظام ہی بہتر ہے ،ہمیں ادھر اُدھر دیکھنے کی بجائے اپنے نظام کو چلانا چاہیے ،عوام کو اشتعال دلانے پر وزیر داخلہ کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے ۔ انہیں فوری طور پر عہدے سے ہٹایا جانا چاہیے ، وزیراعظم نے گلگت بلتستان کے حوالے سے یکطرفہ اعلان کر کے قومی رائے کو رد کیا ہے ،تحریک انصاف جب اپوزیشن میں تھی تو مذہب کارڈ کا استعمال کیا ،اب حب الوطنی کارڈ استعمال کر رہے ہیں ۔ سی پیک میں چین کے ساتھ مل کر کام کیا ، چین نے کبھی ایسا نہیں کہا کہ دوسرے ممالک میں بھی اس کے نظام پر عمل کیا جائے،پیر کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹری جنرل احسن اقبال نے کہا کہ چین کا نظام ایک ارتقائی عمل سے گزر کر یہاں تک پہنچا ہے ، پاکستان کیلئے وفاقی پارلیمانی نظام ہی بہتر ہے ،ہمیں ادھر اُدھر دیکھنے کی بجائے اپنے نظام کو چلانا چاہیے ، ہم اپنا نظام چلا ہی نہیں رہے ۔انہوں نے کہا کہ جب حکومت اور اپوزیشن جماعتوں کو بلایا گیا تو وہاں گلگت بلتستان کی بات رکھی گئی تھی ، اپوزیشن لیڈر شہبازشریف نے کہا تھا کہ اگر گلگت بلتستان کواگر الیکشن کے دوران صوبہ بنائیں گے تو یہ پری پول ریگنگ ہو گی اس کا فائدہ حکمران جماعت کو ہوگا۔ا
احسن اقبال

شیئر کریں

Top