کورونا وائرس دوسری لہر ، ترک صدر نے ملک میں جزوی کرفیو کا علان کر دیا

234136_1488976_updates.jpg

تشویشناک صورت حال سے گزر رہے ہیں، وبائی کیسز اور اموات کی تعداد خطرناک حد تک بڑھ گئی ہے،جزوی کر فیو سے کیسز میں کمی آئے گی ،رجب طیب اردوان
انقرہ(یواین پی) کروناوائرس کی دوسری لہر کے پیش نظر ترک صدر رجب طیب اردوان نے ملک میں جزوی کرفیو کا اعلان کردیا جس کے تحت نئی پابندیاں لاگو ہوں گی۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق کروناوائرس کی دوسری لہر کے دوران ترکی میں بھی مہلک وائرس کے پھیلاؤ میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے جسے مدنظر رکھتے ہوئے ترک صدر نے یہ قدم اٹھایا۔رجب طیب اردوان کا کہنا ہے کہ ہم تشویشناک صورت حال سے گزر رہے ہیں، وبائی کیسز اور اموات کی تعداد خطرناک حد تک بڑھ گئی ہے۔ اس ویک اینڈ سے رات 8 بجے سے صبح 10 بجے تک جزوی کرفیو کا نفاذ رہے گا۔رپورٹ کے مطابق ترکی میں صرف ویک اینڈ پر ہی کرفیو رہے گا جبکہ دیگر عام دنوں میں نئی پابندیوں کے تحت ریستوران، دکانیں، شاپنگ اور ہیر سلون وغیرہ صبح 10 سے رات 8 بجے تک ہی کھولے جا سکیں گے۔جبکہ اسکولوں میں یواین پی تعلیم سال کے آخر تک جا ری رہے گی۔ترک صدر کا یہ بھی کہنا تھا کہ سابقہ کرفیو کا دائرہ بڑھایا جارہا ہے، اب 20 سال اور اس سے کم عمر افراد کو بھی صبح 10 سے شام 4 کے دوران گھر سے نکلنے کی اجازت ہوگی، اس سے قبل یہ پابندی صرف 65 سال سے زائد عمر کے افراد پر تھی، اس کے علاوہ کھیلوں کی سرگرمیاں بغیر تماشائیوں کے ہوں گی۔

شیئر کریں

Top