کورونا لاک ڈاؤن کا حکم نہیں دونگا : نومنتخب امریکی صدر

joe-biden-ukraine-fundraising.jpg

WILMINGTON, DE - SEPTEMBER 24: Democratic candidate for president, former Vice President Joe Biden makes remarks about the DNI Whistleblower Report as well as President Trumps ongoing abuse of power at the Hotel DuPont on September 24, 2019 in Wilmington, Delaware. (Photo by William Thomas Cain/Getty Images)

ایسی کوئی صورتحال نہیں ہے جس کی وجہ سے مجھے لگے کہ ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کی ضرورت پڑے، نومنتخب امریکی صدر کی صحافیوں سے گفتگو
واشنگٹن (آئی این پی )امریکہ میں کورونا وائرس کے کیسز میں اضافے کے باوجود ملک کے نومنتخب صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ وہ ملک بھر میں اس وبا کے باعث لاک ڈاؤن نافذ کرنے کے احکامات جاری نہیں کریں گے۔گزشتہ ورز صحافیوں سے بات کرتے ہوئے جو بائیڈن نے کہاکہ ایسی کوئی صورتحال نہیں ہے جس کی وجہ سے مجھے لگے کہ ملک میں مکمل لاک ڈاؤن کی ضرورت پڑے۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ کاروبار اور دیگر سرگرمیوں کو کب اور کیسے کھولنا ہے اس کا فیصلہ ہر علاقے میں کیسز کی تعداد کے مطابق کرنا ہوگا۔کیسز میں اضافے کی وجہ سے امریکہ کے ادارے سینٹر فار ڈزیز کنٹرول اینڈ پریوینشن نے امریکیوں کو اگلے ہفتے تھینکس گیونگ کے موقع پر سفر کرنے سے منع کیا ہے۔واضح رہے کہ جان ہاپکنز یونیورسٹی کے اعداد و شمار کے مطابق امریکہ میں کورونا وائرس سے اب تک دو لاکھ 52 ہزار 514 ہلاکتیں ہو چکی ہیں۔ امریکہ میں کورونا کے کیسز میں ایک مرتبہ پھر تیزی سے اضافہ ہورہا ہے اور ریاستیں اور شہر اپنے طور پر پابندیاں عائد کر رہے ہیں، جن میں گھر میں رہنا، ریستورانوں میں اندر بیٹھ کر کھانا کھانے پر پابندی اور محدود افراد کا ایک ساتھ جمع ہونا شامل ہے۔سینٹر فار ڈیزیر کنٹرول کے ڈاکٹر ہینری والک نے اس بارے میں صحافیوں کو بتایا ہے کہ، ‘یہ ایک ضرورت نہیں۔ یہ ایک سخت تجویز ہے۔تھینکس گیونگ امریکہ میں سفر کے لحاظ سے مصروف ترین موقع ہوتا ہے۔ چونکہ تھینک گیونگ جمعرات کو ہوتی ہے، بہت سے امریکی جمعے کو چھٹی لے لیتے ہیں اور سنیچر اور اتوار کی چھٹی ملا کر دوسری ریاستوں میں موجود خاندان کے افراد سے ملنے چلے جاتے ہیں۔

شیئر کریں

Top