پاکستان پیپلزپارٹی کے اُمیدوار جمیل احمد کی پریس کانفرنس

g5-2.jpg

پوسٹل بیلٹ پیپرز کی فرانزک رپورٹ اور ووٹ دینے والے افراد کی تصدیق تک جی بی اے حلقہ نمبر 2 کے نتائج جاری نہ کرنے پر اتفاق کرنے کیساتھ پی ٹی آئی، ن لیگ اور پی پی پی کا آپس میں معاہدہ ہوا ہے
ری کاونٹنگ کے دوران پی پی پی کے امیدوار کے 619 ووٹ مسترد کئے گئے ، پی ٹی آئی کے امیدوار کے 276 ووٹ مسترد ہوئے ہیں،ہر حلقے میں نا انصافی ہوئی ،جمیل احمد ،سعدیہ دانش کی مشترکہ پریس کانفرنس
گلگت(سپیشل رپورٹر)پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان کے رہنماوں جمیل احمد’ سعدیہ دانش اور بشیر احمد خان نے سنٹرل پریس کلب گلگت میں پریس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ چیف الیکشن کمشنر نے ان انتخابات کو متنازعہ بنایا ہے۔ اس کے اثرات پوری دنیا میں جائیں گے تمام مقتدر حلقوں کا مطالبہ ہے کہ فرانزک رپورٹ آنے تک نتائج جاری نہ کئے جائیں انہوں نے کہا ہے کہ پوسٹل بیلٹ پیپرز کی فرانزک رپورٹ اور ووٹ دینے والے افراد کی تصدیق تک جی بی اے حلقہ نمبر 2 کے نتائج جاری نہ کرنے پر اتفاق کرتے ہوئے پی ٹی آئی، ن لیگ اور پی پی پی کا آپس میں معاہدہ ہوا ہے۔ معاہدے پر عمل کرتے ہوئے الیکشن کمیشن نتائج جاری نہ کرے۔ انہوں نے کہا کہ ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر نے پوسٹل بیلٹ پیپرز کا لیٹر جاری کیا ہے جس کے مطابق حلقہ نمبر 2 میں 1382 ووٹ وصول ہوئے تھے۔ ری کاونٹنگ کے دوران پتہ چلا کہ پوسٹل بیلٹ پیپرز 1708 ہیں پی پی پی کے امیدوار جمیل احمد کا بھائی شکیل احمد جو کہ کنٹریکٹر ہیں کا پوسٹل بیلٹ پیپرز بنا کر پی ٹی آئی کے امیدوار کو ووٹ دیا گیا ہے،جو کہ کھلم کھلی دھاندلی ہے۔ لہذا انصاف فراہم کیا جائے انہوں نے انکشاف کیا کہ ری کاونٹنگ کے دوران پی پی پی کے امیدوار کے 619 ووٹ مسترد کئے گئے جبکہ پی ٹی آئی کے امیدوار کے 276 ووٹ مسترد ہوئے ہیں انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان کی تاریخ میں پہلی بار بڑی تعداد میں آذاد امیدوار جیتے ہیں راتوں رات پارٹی میں شامل ہونا حیران کن ہے۔ جی بی اے حلقہ نمبر 2 کی طرح گلگت بلتستان کے ہر حلقے میں پی پی پی کے ساتھ نا انصافی ہوئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ آزاد امیدوار صرف پی ٹی آئی میں کیوں شامل ہوئے۔ پی پی پی یا کسی اور سیاسی جماعت میں شامل کیوں نہیں ہوئے۔ ہمارے ساتھ شامل ہوتے تو سی ایم کی آفر کے ساتھ ساتھ الیکشن کے اخراجات بھی پورے کرتے۔
پیپلز پارٹی

شیئر کریں

Top