ٹرمپ اقتدار منتقلی پر رضامند وائٹ ہاوس انتظامیہ نے ضروری کا روائی کا آغاز کر دیا

original.jpg

امریکی جنرل سروس ایڈمنسٹریشن نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی اقتدار منتقلی کے عمل پر رضامندی کے اظہار سے نومنتخب صدر جو بائیڈن کو آگاہ کردیا
واشنگٹن(آئی این پی) امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے صدارتی الیکشن کے کامیاب امیدوار جو بائیڈن کو اقتدار کی منتقلی پر رضامندی ظاہر کردی ہے جس کے بعد وائٹ ہاوس انتطامیہ نے ضروری کارروائی کا باضابطہ آغاز کردیا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق الیکشن میں شکست کو دھاندلی کا نتیجہ قرار دینے اور مخالف جماعت پر الیکشن چرانے کا الزام عائد کرکے عدالت سے رجوع کرنے والے صدر ڈونلڈ ٹرمپ، جوبائیڈن کو اقتدار منتقلی پر رضامند ہوگئے۔امریکی جنرل سروس ایڈمنسٹریشن نے صدر ٹرمپ کی اقتدار منتقلی کے عمل پر رضامندی کے اظہار سے نومنتخب صدر جو بائیڈن کو آگاہ کرتے ہوئے بتایا کہ اب اقتدار کی منتقلی کا عمل باضابطہ طور پر شروع کیا جا سکتا ہے۔صدر ٹرمپ نے صدارتی الیکشن میں اپنی شکست کو تا حال اعلانیہ قبول نہیں کیا ہے تاہم اقتدار کی منتقلی کے عمل کے آغاز سے ثابت ہوتا ہے کہ پہلی بار صدر ٹرمپ کی شکست کو تسلیم کر لیا گیا ہے۔قبل ازیں صدر ٹرمپ اقتدار کی منتقلی کے لیے رضامند نظر نہیں آتے تھے اور نہ ہی انہوں نے جوبائیڈن کو جیت کی مبارکباد دی تھی لیکن اب لگتا ہے کہ انہیں راضی کرنے کی ان کے اہل خانہ اور دوستوں کی کوششیں بآور ثابت ہوگئیں۔

شیئر کریں

Top