خالد خورشید کی نامزدگی اب کسی فاروڈ بلاک کی بات نہیں کی جائیگی : زکریا مقپون

new-gilgit-baltistan-assembly-members-take-oath-today-1606258439-9888.jpg

دیامر ڈویژن کو وزارت اعلی دینے کی حمایت کرتے ہیں اور اس اصولی مطالبے کو تسلیم کرنے پر وزیر اعظم کے شکر گزار ہیں
کسی بڑے عہدے کا لالچ نہیں ،بڑی وزارت لینے کے بعد بھی فٹ پاتھ پر رہنا پسند کروں گا،نومنتخب رکن اسمبلی کی گفتگو
اسلام آباد (عارف صحاب)دیامر ڈویژن کو وزارت اعلی کا منصب دینے کی بھرپور حمایت کرتے ہیں اور اس اصولی مطالبے کو تسلیم کرنے پر وزیر اعظم پاکستان اور پارٹی ہائی کمان کے شکر گزار ہیں ۔ ہم چاہتے ہیں کہ گلگت بلتستان تمام تر مسلکی، قبائلی اور لسانی تعصبات سے پاک ہو ان خیالات کااظہار رکن اسمبلی راجہ زکریا خان مقپون نے باد شمال سے گفتگو کرتے ہوئے کیا انھوں نے مزیدکہا کہ خالد خورشید کی نامزدگی کے بعد مزید کسی فارورڈ بلاک کی بات نہیں کی جائے گی ۔ امید کرتے ہیں کہ وہ خدمت خلق کو اپنا شعار بنائیں گے ۔ راجہ زکریا نے مزید کہا کہ وزارتوں کی تقسیم پر میرا اختلاف اپنی ذات کے لئے نہیں تھا ہم نے پہلے دیامر اس کے بعد بلتستان کی بات کی تھی اور ہمارا بیان ریکارڈ پر موجود ہے ۔ بلتستان کے لئے وزارت اعلی کے مطالبے کو زمین حقائق کی بنیاد پر دیکھا جائے تو ہمارے مطالبے کی دلیل واضح ہے ۔انہوں نے کہا کہ بلتستان سے منتخب ہونے والے ارکان نے کیاطرز عمل اپنا یا اس پر میں کوئی بات کیا کروں سب کچھ عوام کے سامنے ہے ۔ اپنے لئے کسی بڑے عہدے کا لالچ نہیں ۔ بڑی وزارت لینے کے بعد بھی فٹ پاتھ پر رہنا پسند کروں گا ۔ غریب عوام نے ووٹ دیا ہے ان کے ساتھ فٹ پاتھ پر بیٹھنے کو ہمیشہ فخر سمجھا ہے اس لئے عوامی مسائل کے حل کے لئے شاہی ماحول کی بجائے عوامی ماحول میں رہ کر جو کچھ مجھ سے ہوسکے گا ضرور کروں گا ۔ایک سوال کے جواب میں راجہ زکریا خان نے کہا کہ اس بات سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ سچ کی راہ پر چلنے کے دوران کون کون آپ کا دشمن ہوا البتہ اس بات سے ضرور فرق پڑتا ہے کہ نظروں کے سامنے ظلم ہو اور ہم خاموش رہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ بہت جلدکچھ بڑے برج ہلیں گے اور کچھ لوگوں کی شامت آئے گی ۔ نام میں نہیں لوں گا جو بھی ہوگا سب دیکھیں گے ۔
زکریامقپورن

شیئر کریں

Top