سلیکٹڈ حکومت اے این پی کو جیلوں سے نہیں ڈرا سکتی : ایمل ولی خان

amal-wali-khan.jpg

تاریخ گواہ ہے کہ ایسی کوئی جیل نہیں جس میں اے این پی کے اکابرین نے قید و بند کی صعوبتیں برداشت نہ کی ہوں
اے این پی کے ایک بھی کارکن پر سلیکٹڈ حکومت کی جانب سے سیاسی ایف آئی آر کا مطلب ایمل ولی پر ایف آئی آر تصور ہوگا
پشاور(آئی این پی )عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ جنوری کے مہینے میں خدائی خدمتگار تحریک کے صد سالہ تقریبات کے موقع پر اے این پی پشاور میں عظیم الشان جلسہ کر کے یہ بات ثابت کرے گی کہ خدائی خدمتگار تحریک کے وارث ،باچا خان اور ولی خان کے پیروکار زندہ ہیں، پشاور پریس کلب کے سامنے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ پشاور جلسے کی پاداش میں پی ڈی ایم کے ضلعی رہنماوں پر حکومت کی جانب سے ایف آئی آرز درج کرانے کے خلاف عوامی نیشنل پارٹی کے زیر اہتمام عظیم الشان احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے اے این پی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا کہ ایسے مقدمے اور ایف آئی آرز عوامی نیشنل پارٹی کے کارکنان کے لئے کوئی نئی بات نہیں ،سلیکٹڈ حکومت اے این پی کو جھوٹے مقدموں اور جیلوں سے نہیں ڈرا سکتی ،اے این پی کی سو سالہ تاریخ گواہ ہے کہ ایسی کوئی جیل نہیں جس میں اے این پی کے اکابرین نے قید و بند کی صعوبتیں برداشت نہ کی ہو، سلیکٹڈ حکومت کو چیلنج کرتے ہیں کہ اے این پی کے ایک بھی کارکن کو گرفتار کر کے دکھادیں۔حکومت کی جانب سے پی ڈی ایم کے ضلعی رہنماں پر جھوٹے مقدموں کو جوتے کی نوک پر رکھتے ہیں، عوامی نیشنل پارٹی کے ایک بھی کارکن پر اس نالائق، بزدل اور سلیکٹڈ حکومت کی جانب سے سیاسی ایف آئی آر کا مطلب ایمل ولی خان پر ایف آئی آر تصور ہوگا اور اس کا جواب میں خود دوں گا۔ انہوں نے کہا کہ باچا خان اور خدائی خدمتگاروں کو اس مٹی کی خاطر تکالیف برداشت کرنی پڑی، جیلیں کاٹنی پڑی، گولیاں کھانی پڑی لیکن ان کے جذبے پست نہیں ہوئے اور اپنے عقیدوں سے پیچھے نہیں ہٹیں، اے این پی کے کارکنان ان عقائد اور نظریات کی وارث ہے جن کی وجہ سے انگریزوں کو یہ سرزمین چھوڑنی پڑی تو یہ موجودہ جعلی حکومت کیا چیز ہے۔ بابڑہ سے لے کر موجودہ ہشت گردی کا مقابلہ کرنے تک خدائی خدمتگار تحریک کے وارث اے این پی کے کارکنان اپنی جانیں قربان کرنے سے پیچھے نہیں ہٹیں تو سلیکٹڈ حکومت کی جیلیں ان کے سامنے کیا ہے۔
ایمل ولی خان

شیئر کریں

Top