موجودہ حکومت میں صرف چینی،آٹا،پیڑول اور ڈرگ مافیاز نے ترقی کی :سراج الحق

Siraj-Ul-Haq.jpg


2020ء پاکستان کے عوام کے لئے بہت بھاری ثابت ہوا، ملک کی باگ دوڑ مافیاز کے ہاتھ میں رہی، امیر جماعت اسلامی
مافیا نے چینی ، آٹا، پیڑول غائب کرکے اربوں کما ئے اور ملک کو لوٹا،35لاکھ سے زائد افراد بے روزگار ہوئے، پریس کانفرنس
فیصل آباد(آئی این پی ) امیرجماعت اسلامی سینیٹرسراج الحق نے کہا ہے کہ سال 2020ء پاکستان کے عوام کے لئے بہت بھاری ثابت ہوا۔ ملک کی باگ دوڑ مافیاز کے ہاتھ میں رہی جنہوں نے چینی ، آٹا، پیڑول غائب کرکے اربوں کما ئے اور ملک کو لوٹا۔35لاکھ سے زائد افراد بے روزگار ہوئے۔پور۱سال اسمبلیوں میں قانون سازی کی بجائے گالی گلوچ ہوتی رہی۔ ایک طرف کرونا دوسری طرف حکمرانوں کی نااہلی نے لوگوں کی زندگی اجیرن بنائے رکھی۔ پی ٹی آئی اور پی ڈی ایم میں کوئی فرق نہیںدونوںامریکی غلامی پر راضی ہیں۔ قوم نے تینوں بڑی جماعتوں کے ادوار دیکھ لیے۔یہ پارٹیاں جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کے کلبز ہیں۔ جماعت اسلامی عوام کی حقیقی ترجمان اور ملک کو قرآن وسنت کا نظام دینا چاہتی ہے۔ دعاگو ہوںکہ2021ء قومی اتحاد و اتفاق کا سال ہو۔ ان خیالات کااظہارانھوں نے فیصل آباد میں صوبائی امیر وسطی پنجاب جاویدقصوری اور ضلعی امیرمحبوب الزماں بٹ کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ عمران خان کی حکومت میں صرف چینی ،آٹا ، پیڑول اور ڈرگ ما فیاز نے تر قی کی جب کہ غریب آدمی مہنگائی کی چکی میں پس رہاہے۔تعلیمی بجٹ میں کٹوتی کی گئی۔ ورلڈ بینک اور آئی ایم ایف کی غلامی جاری رہی۔ اس وقت بھی آئی ایم ایف کے لوگ اسلام آباد میں بیٹھے ہیں اور بجلی اور گیس کی قیمتوں میں اضافہ کے لیے حکومت پر دباؤ ڈال رہے ہیں۔ وہ یہی چاہتے ہیں کہ حکومت عوام کی گردنوں کو مروڑے رکھے اور ظلم کا نظام جاری رہے۔ انھوں نے کہا کہ اگر ملک میں جاگیر دارانہ اور آمرا نہ نظام ہی جاری رہنا تھا توہمارے آباؤ اجدادکی قربانیوں کا کیا فائدہ ہوا جنہوں نے قائد اعظمؒ کی قیادت میں اس ملک کو اسلام کی تجربہ گاہ بنانے کے لیے انگریز سے آزاد کروایا۔
سراج الحق

شیئر کریں

Top