امریکی سفیر تائیون کا دورہ کرنے سے گریز کرے:چین

unnamed-1.jpg

تائیوان کامعاملہ چین کی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت سے متعلق ہے جس میں چین کے بنیادی مفادات شامل ہیں امریکی سفیر کا دورہ ہمارے اندرونی حالات میں مداخلت تصور کیا جائیگا،ترجمان
اقوام متحدہ(شِنہوا)اقوام متحدہ میں چین کے مستقل مشن کے ترجمان نے کہاہے کہ چین اقوام متحدہ میں امریکہ کے مستقل مندوب کیلی کرافٹ کی جانب سے تائیوان کے طے شدہ دورے کی مخالفت کرتا ہے۔میڈ یا رپورٹس کے مطا بق امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا کہ کرافٹ تائیوان کا دورہ کریں گے،ترجمان نیپا کستانی وقت کے مطابق جمعہ کے روز کہاکہ چین اس کی شدید مخالفت کرتاہے۔ترجمان نے کہا کہ دنیا میں صرف ایک چین ہے اور تائیوان چینی سرزمین کا ایک ناگزیرحصہ ہے۔عوامی جمہوریہ چین کی حکومت واحد قانونی حکومت ہے جو پورے چین کی نمائندگی کرتی ہے۔امریکہ نے سفارتی تعلقات قائم کرنے کے لئے اس بارے1979 کے مشترکہ اعلامیہ سمیت تین چین۔امریکہ مشترکہ اعلامیوں میں واضح عزم کااظہار کیا تھا۔چین امریکہ اور تائیوان خطے کے مابین کسی بھی قسم کے سرکاری روابط کی سختی سے مخالفت کرتا ہے،یہ موقف مستقل اور واضح ہے۔ترجمان نے کہاکہ تائیوان کامعاملہ چین کی خودمختاری اورعلاقائی سالمیت سے متعلق ہے جس میں چین کے بنیادی مفادات شامل ہیں۔ایک چین کا اصول بین الاقوامی برادری کی جانب سیوسیع طورپرتسلیم کیا گیاہیاوریہ عالمی تعلقات عامہ کے لئے بنیادی معمول ہے،اس کی اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کی قرارداد 2758 میں تصدیق کی گئی ہے۔
چین

شیئر کریں

Top