چینی کی قیمت 100 روپے تک پہنچ گئی گھی 20 روپے فی کلو مہنگا

PostImg_0.jpeg

چینی مہنگی ہونے سے گھریلو صارفین مشکلات کا شکار، قیمت 80روپے سے بڑھ کر سو روپے ہوگئی
وزیر اعظم کی جانب سے چینی کی قیمت کنٹرول کرنے کی ہدایات کے باوجود متعلقہ ادارے ذمہ داری نبھانے میں ناکام
لاہور(آئی این پی) چینی کی قیمت کو ایک بار پھر پر لگ گئے ہیں، ایک ہفتے کے دوران چینی کی قیمت 100روپے تک پہنچ گئی، چینی کی قیمتوں میں اضافے کے بعد لاہور میں گھی کی قیمت میں بھی 20روپے فی کلو اضافہ ہوگیا،نجی ٹی وی کے مطابق عوام ایک بار پھر ضروری اشیائے صرف کی قیمتوں کے بوجھ تلے دبنے لگے ہیں، ایک ہفتے کے دوران چینی کی قیمت بڑھتے بڑھتے سو روپے تک پہنچ گئی ہے، چینی مہنگی ہونے سے دکان دار اور گھریلو صارفین مشکلات کا شکار ہیں،چینی کی قیمت 80روپے سے بڑھ کر سو روپے ہوئی ہے، کنٹرول ریٹ پر چینی نہ ملنے کی وجہ سے چھوٹے دکان داروں نے چینی بیچنا ہی چھوڑ دی،مہنگائی سے پریشان عوام کے لیے چینی کی قیمت میں اضافے کے ساتھ ساتھ دکانوں پر اس کی عدم دستیابی بھی ایک بڑا مسئلہ بن چکی ہے، وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے چینی کی قیمت کنٹرول کرنے کی واضح ہدایات کے باوجود متعلقہ ادارے اپنی ذمہ داری نبھانے میں ناکام نظر آتے ہیں جس کی وجہ سے عوام کو ریلیف نہیں مل رہا،دوسری طرف چینی کی قیمتوں میں اضافے کے بعد لاہور میں گھی کی قیمت میں بھی یکمشت 20روپے فی کلو اضافہ ہوگیا ہے، اشیائے ضروریہ کی قیتموں میں اضافے سے صارفین شدید پریشانی کا شکار ہو گئے ہیں،گھی کی قیمت نے اڑان بھر لی ہے اور چند روز کے دوران مختلف برا نڈز کے گھی کی قیمت فی کلو بیس سے 40روپے بڑھ گئی، مختلف کمپنیوں کے گھی کی قیمت فی کلو 220سے بڑھ کر 265روپے تک جا پہنچی ہے،دکان داروں کا کہنا ہے گھی ملز مالکان اور ڈیلرز نے گھی کی سپلائی کم کر کے قیمت بڑھائی ہے اور پرائس کنٹرول کمیٹیاں کہیں نظر نہیں آ رہیں، حکومت نے نوٹس نہ لیا تو گھی کی قیمت مزید بڑھنے کا خدشہ ہے۔
چینی مہنگی

شیئر کریں

Top