براڈشیٹ فرم نے ایک آمراور موجودہحکومت کو بے نقاب کیا گیا:مریم اورنگزیب

maryam-orangzeb12.jpg

پاکستان کے فرسودہ نظام میں آمر اور اداروں سے مل کر منتخب وزیراعظموں کے خلاف سازش ہوتی رہی ہے
مشرف نے 6ماہ کا تجربہ رکھنے والی نجی کمپنی کو 6 ارب روپے دیئے اور منتخب وزیراعظم کیخلاف مقدمات بنانے کا کہا گیا
اسلام آباد (آ ئی این پی) ترجمان مسلم لیگ (ن) مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ براڈ شیٹ فرم نے ایک آمر اور موجودہ حکومت کو بے نقاب کیا اور منہ کالا کیا ہے جبکہ پاکستان کے فرسودہ نظام، جس میں آمر اور اداروں سے مل کر منتخب وزیراعظموں کے خلاف سازش ہوتی رہی ہے، پرویز مشرف نے اپنے حکومت میں 6ماہ کا تجربہ رکھنے والی نجی کمپنی کو 6 ارب روپے دیئے گئے اور منتخب وزیراعظم کے خلاف مقدمات بنانے کا کہا گیا، براڈ شیٹ سے کہا گیا کہ میاں نواز شریف کے خلاف کیس بنائے جائیں، کمپنی کو سیاسی مخالفین اور مریضوں کی لسٹ دی گئی جس کے نتیجے میں کچھ نیب زادے بنے اور کچھ نیب زدہ ہو گئے۔بدھ کو ترجمان مسلم لیگ نون مریم اورنگزیب نے اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مریم نواز نے کہا کہ آج بھی نیب نیازی کا گٹھ جوڑ ہے۔ انہوں نے کہا کہ پرویز مشرف کے دور میں براڈ شیٹ کے 25ملین ڈالر نہیں دیئے گئے کیونکہ ریکوری ہوئی نہیں تھی وہ جعل سازش تھی اور پرویز مشرف نے جھوٹ بولا تھا اور جعلی کمپنی 6ارب دیئے تھے جس نے کوئی ریکوری نہیں کی تھی ، پرویز مشرف نے براڈ شیٹ کے پیسے نہیں دیئے تھے اور پیپلز پارٹی، مسلم لیگ کی حکومتوں نے بھی نہیں دیئے۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ موجودہ حکومت شہزاد اکبر نے براڈ شیٹ سے رابطے کئے اور حقیقت میں حکومت یا نیب کا براڈ شیٹ سے کوئی سرکاری معاہدہ نہیں ہے جبکہ آج اس حکومت نے مذاکرات کے بعد جس میں ایک جنرل بھی شامل تھا 4سو کروڑ روپے جو پاکستانی عوام کے ٹیکس کا پیسہ ہے ادا کیا ہے جبکہ براڈ شیٹ میں ریکوری کا دعویٰ کر رہی ہے تو بتایا جائے کہ وہ کس خزانے میں جمع کرائی گئی ہے ، آج تو ہر روز کہا جاتا ہے کہ نیب نے اتنی ریکوری کرلی ہے تو بتایا جائے کہ وہ کس خزانے میں جمع ہو رہے ہیں۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران خان کو صبح اٹھ کر سوالات نہیں کرنے چاہیں البتہ عمران خان سے سوالات ہونے چاہیے کہ آپ نے ملک کا چار سو کروڑ اس جھوٹ پر اور شہزاد اکبر نے کس بنیاد پر دیئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ براڈ شیٹ کا نواز شریف فیملی سے کوئی رابطہ نہیں ہے جبکہ آج بھی ملک میں آمرانہ سوچ مسلط ہے، شہبزاد اکبر کی جانب سے مذاکرات میں پچاس فیصد حصہ مانگا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان صاحب اب عوام جاننا چاہتے ہیں کہ جھوٹی ریکوری پر مذاکرات کیوں ہورہی ہے اور کس نے کتنے کمیشن لینے کی باتیں ہو رہی ہیں۔ مریم اورنگزیب نے کہا کہ براڈ شیٹ نے عمران خان، نیب نیازی گٹھ جوڑ، پرویز مشرف کے احتساب کا منہ کالا کر دیا گیا ہے۔
مریم اورنگزیب

شیئر کریں

Top