اپوزیشن نے وزیر اعظم عمران خان کے بغض میں ’’میں نہ مانوں ‘‘کی رٹ لگا رکھی ہے، ہمایوں اختر خان

Humayun-Akhtar-Khan-PTI-750x369-1.jpg

ماضی کی حکومتوں کے پیدا کردہ بیگاڑدو سے تین سالوں میں درست نہیں کئے جا سکتے
پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان کی وفد سے ملاقات میں گفتگو
لاہور(آئی این پی)پاکستان تحریک انصاف کے سینئر مرکزی رہنما و سابق وفاقی وزیر ہمایوں اختر خان نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے سابقہ حکمرانوں نے غیر ملکی قرضوں سے ایسے منصوبے بنائے جو اپنی تکمیل کے بعد قرضے واپس کرنے کی بھی صلاحیت نہیں رکھتے ، ماضی کی حکومتوں کے پیدا کردہ بیگاڑاس قدر گھمبیر صورتحال کر چکے ہیں کہ انہیں دو سے تین سالوں میں درست نہیں کیا جا سکتا ، وزیر اعظم عمران خان نے اپنے سیاسی مفادات کو ایک طرف رکھتے ہوئے ملک و قوم کے بہترین مفادمیں اصلاحات کی کڑی گولی نگلنے کا فیصلہ کیا جسے عالمی اداروںنے بھی سراہا ہے۔ ہفتہ کو پارٹی کے سینئر رہنما اعجاز چوہدری کو بلا مقابلہ سینیٹر منتخب ہونے پر مبارکباد دینے اورحلقہ این اے 131کے اکابرین کے وفد سے ملاقات میں گفتگوکرتے ہوئے ہمایوں اختر خان نے کہا کہ موجودہ حکومت نے قطر کے ساتھ طے پانے والے معاہدے پر نظر ثانی کیلئے مسلسل ایک سال تک مذاکرات کئے اوراس کے نتیجے میں سالانہ 300ملین ڈالر کم کرانے میں کامیاب ہوئی ،کیا ماضی میں اس طرح کی کوئی مثال موجود ہے ؟،پاکستان جیسے ملک کے لئے د س سالوںمیں 10ارب ڈالر کی بچت ہوا کا تازہ جھونکا ہے ۔ انہو ںنے کہا کہ آج روپیہ مستحکم ہے ،ہماری برآمدات بڑھ رہی ہیں ، اوور سیز پاکستانی حکومت پر اعتماد کر رہے ہیں اور کورونا وباء کے باوجودترسیلات زر میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے ۔انہوں نے کہا کہ اپوزیشن نے صرف وزیر اعظم عمران خان کے تعصب او ربغض میں ’’میں نہ مانوں ‘‘کی رٹ لگا رکھی ہے لیکن عوام حقائق سے آگاہ ہیں ۔

شیئر کریں

Top