اوپن بیلٹ سے متعلق صدارتی ریفرنس کالعد م ہوچکا،یہ قانون کااطلاق نہیں ،رائے دی گئی ہے، لطیف کھوسہ

download-1-1.jpg

حکومتی اراکین بارہا یہی کہہ رہے ہیں کہ ہمارے موقف کی تائید ہوئی،شفافیت کو یقینی بنانا الیکشن کمیشن کا کام ہے، بیلٹ کی جانچ پڑتال کیلئے الیکشن کمیشن کے پاس طریقہ کار موجود ہے، رہنما پیپلز پارٹی کی میڈیا سے گفتگو
اسلام آباد(آئی این پی ) پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما سردار لطیف کھوسہ نے کہاہے کہشفافیت کو یقینی بنانا الیکشن کمیشن کا کام ہے، بیلٹ کی جانچ پڑتال کیلئے الیکشن کمیشن کے پاس طریقہ کار موجود ہے،اوپن بیلٹ سے متعلق صدارتی ریفرنس کالعد م ہوچکاہے ،حکومتی اراکین بارہا یہی کہہ رہے ہیں کہ ہمارے موقف کی تائید ہوئی ،یہ قانون کا اطلاق نہیں بلکہ یہ رائے دی گئی ہے۔ میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے سردار لطیف کھوسہ نے کہاکہ حکومتی آرڈیننس کو سپریم کورٹ نے مسترد کیا ہے،الیکشن آئین کے آرٹیکل 226 کے تحت ہوں گے ، سپریم کورٹ نے الیکشن کمیشن کو ترجیح دی، لطیف کھوسہ نے کہاکہ حکومت کو چاہیے ہی نہیں تھا یہ درخواست دیتی،الیکٹرانک ٹیکنالوجی کے استعمال کی ڈائریکشن دی، سپریم کورٹ نے یہ بھی کہا کہ سیکریسی تاحیات نہیں رہے گی۔ رہنما پیپلزپارٹی کاکہناہے کہ الیکشن میں شفافیت ضروری ہے ،آئین الیکشن کمیشن کواختیار دیتاہے کہ وہ آزادانہ وشفاف انتخاب کرائے ، شفافیت سے ہی جمہوریت کو تقویت ملتی ہے ،شفافیت کو یقینی بنانا الیکشن کمیشن کا کام ہے ۔انہوں نے کہاکہ انتخابات کو شفاف بنانا ملک کا سب سے بڑا مسئلہ ہے،بیلٹ کی جانچ پڑتال کیلئے الیکشن کمیشن کے پاس طریقہ کار موجود ہے۔

شیئر کریں

Top