مسلم لیگ (ن) کی ممبر گلگت بلتستان اسمبلی رانی صنم فریاد نے نپورہ بسین میں منعقدہ شہیدامن سیف الرحمن خان کی اٹھارویں برسی کی قرآن خوانی مجلس و تقریب میں شریک خواتین کے اجتماع سے خطاب

DWG4shZW4AEE4Lv.jpg

گلگت(پ۔ر) مسلم لیگ (ن) کی ممبر گلگت بلتستان اسمبلی رانی صنم فریاد نے نپورہ بسین میں منعقدہ شہیدامن سیف الرحمن خان کی اٹھارویں برسی کی قرآن خوانی مجلس و تقریب میں شریک خواتین کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ سیف الرحمن خان کسی شخصیت کا نہیں بلکہ امن اور ترقی و خوشحالی پر مبنی ایک مظبوط نظریے کا نام ہے اور سفیر امن حافظ حفیظ الرحمن اسی ترقی امن مشن کی تکمیل کا نام ہے۔جان سے بڑی قربانی کوئی نہیں ہوتی ہے اور ہمیں اپنے عظیم قائد سیف الرحمن شہید پر فخر ہے انہوں نے خطے کے امن کےلئے اپنی جان قربان کیں اور امن کو بچایا اور ایسی قربانی دھرتی کی مٹی سے پیار کرنے والے حقیقی محب وطن ہی دے سکتے ہیں۔رانی صنم نے کہا کہ نپورہ بسین کی تاریخ کا یہ پہلا پروگرام ہے جہاں بڑی تعداد میں دیگر اضلاع و علاقوں کی خواتین نے شرکت کیں تاہم بسین کی خواتین گزشتہ کئی سالوں سے شہید امن کی برسی کا یہ دن منارہی ہے جس کے لئے خصوصی مبارکباد کی مستحق ہیں اور دوسرے علاقوں سے آئی ہوئی اپنی ماؤں بہنوں کی شہید امن سے دلی محبت والی جذبات کو ہماری پوری جماعت سلام پیش کرتی ہے۔ اور میں مسلم لیگ (ن) خواتین ونگ نپورہ بسین یونٹ کی صدر نادرہ فاروق کو بھی سلام پیش کرتی ہوں کہ انہوں بہت ہی شاندار اور کامیاب پروگرام کا انعقاد کیا۔شہید امن کو قومی ستارہ جرات دینے کا سب سے پہلے مطالبہ بھی ہم خواتین نے ہی کیا تھا اور اس پر بھی ہمیں فخر ہے کہ حکومت پاکستان نے ان کی قربانیوں کا اعتراف کرتے ہوئے قومی ایوارڈ ستارہ جرات سے نوازا۔قبل ازیں (ن) لیگ خواتین ونگ نپورہ بسین یونٹ کی صدر نادرہ فاروق،عشرت بی بی اور انیلہ انور نے بھی خطاب کیا اور شہید امن سیف الرحمن خان کی امن خدمات کو خراج تحسین پیش کیا۔واضح رہے کہ اس پروگرام میں گلگت سمیت دیگر اضلاع سے بھی مسلم لیگی خواتین کی بڑی تعداد نے شرکت کیں اور قرآن خوانی میں بھرپور حصہ لیا۔ پروگرام صبح گیارہ بجے شروع ہوا اور سہہ پہر تین بجے تک جاری رہا

شیئر کریں

Top