بھارت کشمیریوں سے محاصرہ اٹھائے، عالمی ادا رہ صحت سمیت دیگر اداروں کو وہاں پر صحت کی عالمی راہدری بنانے کی اجازت دے،کشمیر کمیٹی کی عالمی برادی سے اپیل

Shah-Mehmood-Qureshi.jpg

بھارت میں کورونا کی بگڑتی صورتحال پر مدد کی پیش کش کی، پاکستان نے انسانی ہمدردی کے تحت پیش کش کی بدقسمتی سے ابھی تک بھارت کی جانب سے جواب نہیں آیا ،کشمیر میں آبادی کے لحاظ سے سہولیات تر تشویش ہے، مقبوضہ کشمیر کے عوام اٹھارہ ماہ سے ڈبل لاک ڈاون کا سامنا کر رہے ہیں، پاکستان نے سیاست سے بالا تر ہو کر کشمیر کا معاملہ تمام فورمز پر اٹھایا ، وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی
اسلام آباد ( آئی این پی)کشمیر کمیٹی نے عالمی برادی سے اپیل کہ ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں کرونا کی بگڑتی ہوئی صورت حال کے پیش نظر وہ بھارت پر دباو ڈالے کہ کشمیریوں سے محاصرہ اٹھائے اور عالمی ادا رہ صحت سمیت دیگر اداروں کو وہاں پر صحت کی عالمی راہدری بنانے کی اجازت دے وفاقی وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت میں کورونا کی بگڑتی صورتحال پر مدد کی پیش کش کی پاکستان نے انسانی ہمدردی کے تحت پیش کش کی بدقسمتی سے ابھی تک بھارت کی جانب سے جواب نہیں آیا کشمیر میں آبادی کے لحاظ سے سہولیات تر تشویش ہے مقبوضہ کشمیر کے عوام اٹھارہ ماہ سے ڈبل لاک ڈاون کا سامنا کر رہے ہیں پاکستان نے سیاست سے بالا تر ہو کر کشمیر کا معاملہ تمام فورمز پر اٹھایا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز کشمیر کی پارلیمانی کمیٹی کا اجلاس چئیرمین کشمیر کمیٹی شہریار آفریدی کی سربراہی میں پارلیمنٹ میں منعقد ہوا۔ اجلاس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی ترجمان دفتر خارجہ معاون خصوصی صحت آزر بائیجان سمیت دیگر ممالک کے سفیروں کی شرکت کی ۔اجلاس میں مقبوضہ کشمیر میں کورونا کی بگڑتی صورتحال اور مودی سرکار کی بے حسی پر اظہار تشویش کیا گیا چئیرمین کمیٹی شہریار آفریدی نے کہا کہ کورونا سے پوری دنیا بری طرح متاثر ہوئی بھارت میں کرونا کی صورتحال بگڑ چکی ایک کروڑ تیس لاکھ سے زائد افراد متاثر ہو چکے ہم نے مشکل گھڑی میں بھارت کو مدد کی پیش کش کی مودی کشمیر میں صحت کی سہولیات کے بجائے ٹوئٹر پر ہیش ٹیگ بلاک کروا رہا ہے مقبوضہ کشمیر میں کرونا کی صورتحال خراب ہے مقبوضہ کشمیر میں کورنا کیسز پاکستان سے بڑھ گے ہیں مقبوضہ کشمیر میں بھارت نے صحت کی سہولیات فراہم نہیں کیں دنیا صحت کی سہولیات کیلئے بھارت پر دباو ڈالے اجلاس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ شہریار آفریدی دنیا انسانی ہمدردی کی بنیاد پر کشمیر میں میڈیکل ریلیف بھیجوائے انہوں نے کہا کہ انسانی ہمدردی کی بنیاد پر آج بھارت کو ایک بار پھر مدد کی پیش کش کی ہے ہم بھارت کی انسانی تقاضوں کو مدنظر رکھتے ہوئے مدد کرنا چاہتے ہیں بھارت کی جانب سے ابھی تک جواب آنے کے منتظر ہیں مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر بے حد تشویش ہے کشمیر کے لوگ ڈبل لاک ڈاون کا شکار ہو رہے ہیں کشمیری عوام فوجی اور کرونا دونوں لاک ڈاو[L:4 R:4][L:160] کا سامنا ہے کشمری عوام کی ہسپتالوں، ادویات اور ویکسینیشن تک رسائی انتہائی مشکل ہو رہی ہے اسی بنیاد پر آج ہم انسانی حقوق کی تنظیموں اور دنیا سے بھارت کو میڈیکل کوریڈور بنانے کے لآمادگی کی درخواست کی ہے تاکہ کشمیر میں میڈیکل سہولیات اور امداد پہنچائی جا سکے وزیر اعظم کی ترقی پزیر ممالک کو قرض میں ریلیف کی تجویز سے بہت سے ممالک کو فائدہ ہوا کرونا کی تیسری لہر نے دنیا کو اپنے لپیٹ میں لے رکھا ہے موجودہ صورتحال میں مزید مراعات کی گنجائش ہونی چاہیے اجلاس میں وزیر اعظم کے میشر معاوں خصوصی صحت ڈاکٹر فہیصل سلطان نے کہا کہ دنیا ترقی پذیر ممالک کو قرض کی ادائیگی میں وقت دے تاکہ ترقی پذیر ممالک یہ رقم ہیلتھ کیئر سسٹم میں لگائیں پاکستان میڈیکل کے شعبے میں بھارت کی مدد کو تیار ہے میڈیکل آلات سمیت افرادی قوت بھی فراہم کر سکتے ہیں۔ ڈاکٹر معید یوسف نے کہا کہ پانچ اگست کے بعد کشمیریوں کی زندگیوں کو زیادہ حطرات ہیں کشمیر میں ڈبل لاک ڈاون کے دوران بھارتی فوج نے آپریشن جاری رکھے ہیں مقبوضہ کشمیر کیلئے انٹرنیشنل میڈیکل کوریڈور بنایا جائے ۔ معاون خصوصی صحت ڈاکٹر فیصل سلطاننے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں آکسیجن کی طلب میں اضافہ ہوا ہے جیسے جیسے حالات خراب ہوتے ہیں طلب بھی بڑھ رہی ہے آکسیجن کی سپلائی کو برقرار رکھنے کے لئے حکمت عملی بنارہے ہیں طبی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے اضافی سلینڈر پروکیور کریں گے بلیک مارکیٹ کا واحد حل یہ ہے کہ آپ سپلائی بہتر کریں 5 ہزار کرونا انجکشن منگوا چکے ہیں مزید بھی منگوائیں گے گزشتہ عید پر بد احتیاطی سے کرونا کی پہلی لہر آئی گلے اگلے دن چندانتہائی اہمیت کے حامل ہیں اگر ہم نے احتیاطی تدابیر پر عمل کیا تو حالات پر کنٹرول کرنا آسان ہوجائے گا۔

شیئر کریں

Top