سیاحت کا فروغ اولین ترجیح ہے محکمہ سیاحت کا آفس اسلام آباد میں کھولا جائیگا:وزیر اعلیٰ

g8.jpg

حکومت گلگت بلتستان کے مقامی کوہ پیماؤں اور سیاحت سے وابسطہ افراد کو درپیش مسائل اور انکے حل کے لئے کوشاں ہیں
الپائن کلب کے وفدکی وزیراعلی سے ملاقات ،کوہ پیمائی تربیت کیلئے قائم سکول کو سرکاری سطح پر چلانے کی یقین دہانی کرائی
گلگت (بادشمال نیوز)وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان محمد خالد خورشید خان نے کہا ہے کہ ہماری حکومت گلگت بلتستان کے مقامی کوہ پیماؤں اور سیاحت کے شعبے سے وابسطہ افراد کو درپیش مسائل اور انکے حل کے لئے کوشاں ہیں اس حوالے سے جامع اور عملی اقدامات کئے گئے ہیں تاکہ سیاحوں اور سیاحت سے وابستہ مقامی افراد کو درپیش مسائل کو حل کیا جا سکے ۔اس حوالے سے محکمہ سیاحت کا کیمپ آفس اسلام آباد میں کھولا گیا ہے تاکہ کوہ پیمائی کے حوالے سے لائسنس کے اجراء کو بر وقت یقینی بنایا جا سکے ان خیالات کا اظہاروزیر اعلیٰ گلگت بلتستان خالد خورشید نے صدر الپا ئن کلب آف پاکستان کی سربراہی میں ملاقات کے لئے آنے والے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ، وفد میں پاٹو کے ممبران اور رواں ماہ K2سر کرنے کے لئے جانے والے ضلع گانچھے ہوشے سے تعلق رکھنے والی ٹیم کے سربراہ تقی ہوشے بھی شامل تھے۔وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے اس موقع پر آٹھ جولائی کو K2 سر کرنے کے لئے روانہ ہونے والی مقامی کوہ پیماؤں کی ٹیم کے لئے نیک خواہشات کا اظہار کیا او ر K2 پر لہرانے کے لئے سبز ہلالی پرچم تقی ہوشے کے حوالے کیا ۔وزیر اعلیٰ نے محکمہ سیاحت گلگت بلتستان کو ہدایات جاری کیں ہیں کے ٹو سر کرنے والی مقامی کوہ پیماؤں کی ٹیم کے ساتھ تعاون کیا جائے۔ وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان نے گانچھے ہوشے گاؤں میں مقامی کوہ پیماؤں کے تعاون سے کوہ پیمائی کی تربیت کیلئے بنائی جانیوالی سکول کو سرکاری سطح پر چلانے کے لئے بھی اقدامات کرنے کی یقین دہانی کرائی تاکہ گلگت بلتستان کے نوجوانوں کوکوہ پیمائی کے حوالے سے زیادہ سے زیادہ تربیت کے مواقع فراہم کئے جا سکیں ۔وزیر اعلیٰ نے کہا کوہ پیمائی کے حوالے سے تربیت کیلئے بیرون ممالک میں بھی جدید تربیت کیلئے اقدامات کئے جا رہے ہیں تاکہ مقامی سطح پر کوہ پیمائی کے شعبے کو فرو غ دیا جا سکے ۔
وزیراعلیٰ

شیئر کریں

Top