بھارت نے سلامتی کونسل اور بین الاقوامی قوانین کی کھلی خلاف ورزی کی،علی امین گنڈاپور

pic_1604140664.jpg

مقبوضہ کشمیر میں 9 لاکھ بھارتی افواج کشمیریوں کا محاصرہ جاری رکھے ہوئے ہیں، کشمیریوں کی اپنے حقوق کے لیے ڈٹ جانے کی ایک عظیم تاریخ ہے، وفاقی وزیر اُمور کشمیر و گلگت بلتستان کا بیان
اسلام آ باد (آئی این پی ) وفاقی وزیر اُمور کشمیر و گلگت بلتستان علی امین خان گنڈاپور نے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں 5 اگست 2019ء کے بھارتی غیر قانونی اور یکطرفہ اقدامات کو دوسال مکمل ہو چکے ہیں، بھارت نے سلامتی کونسل اور بین الاقوامی قوانین کی کھلی خلاف ورزی کی، مقبوضہ کشمیر میں 9 لاکھ بھارتی افواج کشمیریوں کا محاصرہ جاری رکھے ہوئے ہیں، کشمیریوں کی اپنے حقوق کے لیے ڈٹ جانے کی ایک عظیم تاریخ ہے۔ جمعرات کو وفاقی وزیر نے یوم استحصال کشمیر کے موقع پر پیغام میں کہا مقبوضہ کشمیر میں ماورائے عدالت قتل اور نام نہاد سرچ آپریشنز بغیر کسی روک ٹوک کے جاری ہیں، مسئلہ کشمیر جنوری 1948 ء سے اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر موجود ہے، مسئلہ کشمیر اور مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ظلم و جبر سے متعلق دُنیاکی آگاہی میں اضافہ ہوا ہے، بین الاقوامی انسانی حقوق کے اداروں،پارلیمنٹس نے مسئلہ کشمیر اور مقبوضہ کشمیر میں ابتر انسانی حقوق کے حالات کو اُجاگر کیا ہے۔ علی امین گنڈاپور نے کہا بھارت مقبوضہ کشمیر میں کشمیری عوام کا جاری محاصرہ فوری ختم کرے، بھارت کشمیریوں کے حقیقی نمائندوں کل جماعتی حریت کانفرنس رہنماؤں کو آزاد کرے،مسئلہ کشمیر کا منصفانہ حل جنوبی ایشیاء میں دیر پا امن اور استحکام کو یقینی بنائے گا، کشمیری عوام کی حق خودارادیت کی جدوجہد کی غیر متزلزل حمایت جاری رکھیں گے۔

شیئر کریں

Top