چین نے ذاتی معلومات کی حفاظت کا نیا قانون منظور کرلیا

thediplomat-1200px-opening_ceremony_of_19th_national_congress_of_the_communist_party_of_china_voa.jpg

بیجنگ(شِنہوا)چین کی اعلی مقننہ نے جمعہ کے روز ذاتی معلومات کے تحفظ سے متعلق ایک نیا قانون اپنانے کے حق میں ووٹ دیا جو یکم نومبر سے نافذ العمل ہوگا۔قومی عوامی کا نگریس کی قائمہ کمیٹی کے منگل کو شروع ہونے والے باقاعدہ قانون ساز سیشن کے اختتامی اجلاس میں قانون سازوں نے اس قانون کی منظوری دی۔قانون کیمطابق جب خودکار فیصلہ سازی کے ذریعے افراد کو معلومات اور کاروباری مارکیٹنگ بھیجی جاتی ہے تو ذاتی معلومات آگے بڑھانے والے کو ایسے اختیارات فراہم کرنے چاہئیں جو ایک ہی وقت میں ذاتی خصوصیات کو ہدف نہیں بناتے یا مسترد کرنے کے طریقے پیش کرتے ہیں۔اس میں کہا گیا ہے کہ انگوٹھے کے نشان، طبی اور صحت، مالیاتی اکانٹس اور ٹھکانے بارے حساس ذاتی معلومات آگے بڑھاتے وقت انفرادی رضامندی حاصل کی جانی چاہئے۔قانون کے مطابق ان ایپس کی خدمات کو معطل یا ختم کرنے کی بھی ضرورت ہے جو غیر قانونی طور پر ذاتی ڈیٹا پر کارروائی کرتی ہیں۔

شیئر کریں

Top