کونسل الیکشن ،ٹکٹوں کی تقسیم کا مرحلہ مکمل حشمت اللہ کنفرم، گلگت سے میر قاسم اور آغا بہشتی کے نام زیرغور

pakistan-voting-01.jpg

بلتستان ریجن سے امیدوار کی نامزدگی اب سرپرائز بن گئی،دیامرریجن سے سید شبیہ الحسن اور عبد الرحمان اور عطا اللہ کی کامیابی کے امکانات واضح
ن لیگ کی قیادت ایوب وزیری کی حمایت حاصل کرلے تو چار، چار ووٹوں کی برابری سے دونوں پارٹیوں میں ٹائی ہوگا اور سیٹ کا فیصلہ ٹاس پر ہوسکتا ہے
سکردو (غلام علی وفا سے) گلگت بلتستان کونسل کے لیے حکمران جماعت تحریک انصاف نے ٹکٹوں کی تقسیم کا کام تقریبا مکمل کر لیا، انتہائی معتبر ذرائع سے حاصل معلومات کے مطابق تحریک انصاف نے گلگت بلتستان کونسل کے لیے پی ٹی آئی کے سینئر رہنما حشمت اللہ کا ٹکٹ بھی کنفرم کردیا ہے اس طرح دیامر ریجن سے حکمران جماعت کے تین امیدواروں حشمت اللہ ، سید شبیہ الحسن اور عبد الرحمان سمیت مبینہ طور پر پی ٹی آئی کے ہی حمایت یافتہ آزاد امیدوار عطا اللہ کی کامیابی کے امکانات واضح ہوگئے ہیں پی ٹی آئی کے حصے کی باقی ماندہ ایک سیٹ کے لیے گلگت سے میر قاسم اور آغا بہشتی کے نام زیرِ غور ہیں جبکہ بلتستان ریجن سے امیدوار کی نامزدگی اب سرپرائز بن گئی ممکن ہے بلتستان ریجن ” ان سِیٹ ” ہی ہوجائے ، اس صورت حال پر تحریک انصاف بلتستان کے سینئر رہنماوں نے سوشل میڈیا کے ذریعے سخت ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے اس کو نہ صرف بلتستان ڈویژن کے ساتھ زیادتی قرار دیا ہے بلکہ اس کا موازنہ مسلم لیگ ن کی سابق حکومت جس نے بلتستان ریجن کو کونسل کی تین سیٹیں دی تھی سے کرتے ہوئے اس فصیلے سے پارٹی کو مستقبل میں پہنچنے والے نقصانات کے خدشات کا اظہار بھی کیا ہے جبکہ اپوزیشن کے حصے میں آنے والی گلگت بلتستان کونسل کی واحد سیٹ بظاہر عددی اعتبار سے پیپلز پارٹی کے ہاتھ آتی نظر آرہی ہے تاہم اگر ن لیگ کی قیادت اسلامی تحریک کے ممبر ایوب وزیری کی حمایت حاصل کرنے میں کامیاب ہوجائے تو چار چار ووٹوں کی برابری سے دونوں پارٹیوں میں ٹائی ہوگا اور سیٹ کا فیصلہ ٹاس کے زریعے ہوسکتا ہے۔
کونسل الیکشن

شیئر کریں

Top