شعیب اختر فائنل میں شکست پر نیوزی لینڈ پر برس پڑے

269544_9936428_updates.jpg

آئی سی سی ٹی ٹوئنٹی ورلڈکپ کے فائنل میں آسٹریلیا کی پہلی مرتبہ جیت اور نیوزی لینڈ کے تیسری مرتبہ فائنل میں پہنچنے کے باوجود شکست پر پاکستان کے سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے ناراضی کا اظہار کیا۔

سوشل میڈیا پر جاری ویڈیو بیان میں شعیب اختر نے کہا کہ آسٹریلیا نے نیوزی لینڈ کو بڑا پھینٹا لگایا اور میچ میں کہیں آنے ہی نہیں دیا۔

شعیب اختر نے کیویز کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ دوران میچ نیوزی لینڈ ایسی ٹیم لگی ہی نہیں جو آسٹریلیا کو شکست دے سکے، نیوزی لینڈ کی عوام بہترین ہے لیکن اس کے باوجود ان کے کھلاڑی اپنی عوام کو بھی غمگین کرجاتے ہیں۔

سابق کرکٹر نے مزید کہا کہ نیوزی لینڈ کے پاس ایسی بولنگ لائن نہیں جو رنز کو روک سکے، دکھ ہوا لہٰذا کل بھی نیوزی لینڈ کو شکست کھاتا دیکھ کر دکھ ہوا۔

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ نیوزی لینڈ 1992 میں ہم سے ورلڈکپ کا سیمی فائنل ہاری، پھر 1999 میں شکست کھائی، پھر 2015 ،2019 اور اب ایک بار پھر 2021 میں بھی نیوزی لینڈ کو شکست کھاگئی، اس کے باوجود اچھی بات یہ ہے کہ نیوزی لینڈ ہر ٹورنامنٹ کے سیمی فائنل یا فائنل تک کوالیفائی کرتا ہے لیکن اختتام تک نہیں پہنچ پاتا۔

سابق فاسٹ بولر نے کہا میرا خیال ہے کہ نیوزی لینڈ ٹیم کا مستقبل روشن ہے لیکن انہیں اس کے لیے تگڑا ہونا پڑے گا۔

شیئر کریں

Top