سٹینڈنگ کمیٹیوں کے سربراہان عہدے اور لگژری گاڑیاں لے کر غائب،پارلیمانی نظام جمود کا شکار

گلگت( بیورو رپورٹ)گلگت بلتستان اسمبلی کی سٹینڈنگ کمیٹیوں میں اہم عہدے اور لگژری گاڑیاں لیکر اپوزیشن سے تعلق رکھنے والے سربراہان غائب ہو گئے جس سے پارلیمانی نظام جمود کا شکار ہو کر رہ گیا ہے۔اپوزیشن کی مسلسل واویلا پر حکومت کی طرف سے ایک سال بعد سٹینڈنگ کمیٹیوں کے سربراہوں کی تقرری عمل میں لائی گئی تھی تاہم سٹینڈنگ کمیٹیوں میں عہدوں کے عوض لگژری گاڑیاں لیکر اپوزیشن ارکان عیاشیوں میں مصروف ہو گئے ہیں،کسی بھی کمیٹی کا کوئی ایک اجلاس بھی نہ بلایا جاسکا جس سے پارلیمانی امور ٹھپ ہو کر رہ گئے ہیں۔زرائع سے معلوم ہوا ہے کہ کمیٹیوں میں زمہ داریاں سنبھالنے کے فوری بعد تعارفی اجلاس بلایا جاتا ہے۔مگر کئی ہفتے گزر جانے کے باوجود یہ تعارفی اجلاس بھی نہیں بلایا گیا ہے۔زرائغ کے مطابق اب تک شہزاد آغا نے صرف ایک محکمے کے سیکرٹری کو وضاحت کیلئے طلب کیا تھا جبکہ دیگر کسی بھی کمیٹی کا کوئی اجلاس نہیں ہو رہا ہے۔ بعض ارکان صوبائی اسمبلی کی جانب سے اہم کمیٹی کی سربراہی کے لیے بھاری خرچے کر نے کا انکشاف بھی ہوا ہے، اس حوالے سے اپوزیشن لیڈر نے بھی اجلاس میں اہم کمیٹیوں کے چیئرمین شپ بھی فروخت کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔

شیئر کریں

Top