جسٹس جمال خان مندوخیل کے اختلافی نوٹ میں آڈیو لیکس کا تذکرہ

123-696.jpg

اسلام آباد: جسٹس جمال خان مندوخیل نے اختلافی نوٹ میں آڈیو لیکس کا تذکرہ کیا۔

جسٹس جمال مندوخیل نے کہا کہ غلام ڈوگر کیس سے متعلق آڈیو سنجیدہ معاملہ ہے، جسٹس اعجاز الاحسن اور جسٹس مظاہر علی نقوی الیکشن سے متعلق پہلے ہی اپنا ذہن واضح کرچکے ہیں۔
انہوں نے نوٹ میں کہا کہ دونوں ججز کا موقف ہے کہ انتخابات 90 روز میں ہونے چاہیے، دونوں ججز نے رائے دیتے وقت آڑٹیکل 10 اے پر غور نہیں کیا۔
جسٹس جمال مندوخیل نے کہا کہ ان حالات میں چیف جسٹس کا از خود نوٹس لینے کا کوئی جواز نہیں بنتا۔

شیئر کریں

Top