ٹی بی ایک مہلک اور خطرناک بیماری لیکن قابل علاج ہے،ماہرین صحت

g2-11.jpg

استور(بیوررورپورٹ)دنیا بھر کی طرح استور میں بھی محکمہ صحت استور کے زیر نگرانی ٹی بی کا عالمی دن منایا گیا اس موقعے پر ڈی ایچ او استور ڈاکٹر صلات الدین اور ایم ایس ڈی ایچ کیو ڈاکٹر نواب خان کی نگرانی میں ایک واک بھی کیا گیا اس موقعے پر ڈاکٹر نواب احمد اور ڈاکٹر صلات الدین نے واک کے شرکا سے خطاب کرتے ہوہے کہا کہ ٹی بی ایک مہلک اور خطرناک بیماری ہے مگر قابل علاج ہے ٹی بی کا عالمی دن* ٹی بی قابل علاج مرض ہے24 مارچ اٹھارہ سو بیاسی 1882 کو رابیٹ کاک نامی ایک سائنسدان نے ٹی بی کا جرثومہ مائیکو بیکٹیریم ٹیوبر کلوسس کو دریافت کیا اس لیے ہر سال 24 مارچ کو ٹی بی ڈی منایا جاتا ہے اس کا مقصد لوگوں میں ٹی بی بیماری کی علامات فری تشخص فری ادویات اور ادویات کی مستقل مزاجی سے استعمال کرتے ہوئے چھ ماہ کا بلا ناغہ کورس مکمل کرنے کے حوالے سے لوگوں اور مریضوں میں شعور و آگاہی پیدا کرنا ہیاگر ایک پازیٹو ٹی بی کا مریض علاج نہ کریں تو سال میں 14 افراد کو یہ بیماری پھیلاتا ہے ٹی بی کو عالمی اور نیشنل افت بھی قرار دیا گیا ہ

شیئر کریں

Top