چینی کمپنی ایم سی ایم نے پاکستان آٹوموٹو مارکیٹ میں قدم جما لیا

unnamed-2.png

کمپنی پلانٹ کی سالانہ پیداواری صلاحیت 30000 یونٹ ہے
اسلام آباد (آئی این پی ) چینی کمپنی ماسٹر چانگن موٹرز (ایم سی ایم) کی دلکش ڈیزائن ، لگژری سہولیات اور کم قیمت تیار کردہ گاڑیوں نے پاکستان کی آٹوموٹو مارکیٹ میں قدم جما لیا۔ گوادر پرو کے مطابق پاکستان کے ماسٹر گروپ اور چین کی چانگن کار ساز کمپنی نے مشترکہ منصوبے کے تحت کراچی میں 2017 میں ایم سی ایم قائم کی۔ چانگن نے دائیں ہاتھ سے چلنے والی گاڑیاں تیار کرنے کے لئے پاکستان کا انتخاب کیا اور جلد ہی پاکستانی آٹوموٹو مارکیٹ میں بڑی تیزی سے قدم جما لیا۔فی الحال پلانٹ کی سالانہ پیداواری صلاحیت 30000 یونٹ ہے۔ چانگن کے پاس ملک بھر میں 20 ڈیلرشپس ہیں۔چانگن خیبر موٹرز ڈیلرشپس 2019 کے وسط میں پشاور میں قائم کی گئی تھی۔ سیل ایگزیکٹو ایم سی ایم پشاور منصور خان نے گوادر پرو کو بتایا کہ کورونا وبا کے باوجود ہم نے 2020 میں چانگن کے 300 یونٹ فروخت کردیئے ہیں۔ انہوں نے کہا جس طرح ممکنہ صارفین ڈیلرشپ پر آ رہے ہیں میں توقع کرتا ہوں کہ چانگن کاریں اور پک اپس بہت جلد کے پی کی آٹو مارکیٹ میں اپنی جگہ بنا لیں گی ۔ منصور خان نے کہا کہ چانگن السوین نے حیران کن حد تک بڑی تیزی سے آٹوموٹو مارکیٹ میں جگہ بنائی ہے جبکہ ایم سی ایم نے پیشگی بکنگ شروع کر دی تو ان کے مطابق بہت ہی مختصر عرصے میں السوین کے 17000 یونٹ بک کروائے گئے تھے۔ انہوں نے مزید کہا چانگن خیبر موٹرز کے السوین میں 55 یونٹ کا کوٹہ تھا یہ حدف پہلے 36 گھنٹوں میں ہی حاصل کر لیا گیا ۔ انہوں نے کہا کہ السوین یورو 5 انجن پر مشتمل ہے جو پاکستان میں پہلی بار متعارف کرایا گیا ہے۔ خان نے کہا چانگن کا بلوکور ٹیکنالوجی انجن کارکردگی اور ماحول دوست ہے۔ محمد شاہ جنہوں نے السوین سیڈان کی پری بک کروائی ہے نے کہا کہ اس قسم کی کاروں میں یہ واقعتا سب سے بہتر انتخاب تھا۔ انہوں نے کہا السوین کا اصل مسابقتی فائدہ اس کی قیمت ہے جو کہ استعمال شدہ جاپانی ہیچ بیک کار کی قیمت کے برابر ہے۔ شاہ نے کہا نئی لگژری کار یا استعمال شدہ کار خریدنا صارف کی صوبدید ہے۔ پشاور میں مختلف ڈرائیوروں کے ساتھ بات چیت سے معلوم ہوا کہ چانگن ایم 9 اور ایم 8 کے پی میں مقبول منی لوڈر ہیں۔ دونوں کارگو صلاحیت اور ایندھن کی اوسط کے حامل طاقتور لائٹ ٹرک ہیں۔ ایم 9 پِک اپ کے مالک اعجاز احمد نے کہا گاڑی ایک طاقتور انجن کے ساتھ آئی ہے اور سب سے بڑھ کر یہ ایندھن سے چلنے والی ہے۔ انہوں نے کہا کہM9 گاڑی لوڈنگ اور ان لوڈنگ کے حوالے سے اس لیے زیادہ مناسب ہے کیو نکہ ڈرائیور اپنے طور پر لوڈر کے تینوں کنارے کھول سکتا ہے ۔ اعجاز احمد اس حد تک مطمن ہے کہ انہوں نے اپنے اہل خانہ کے لئے درمیانے درجے کی وین کاروان ایم پی وی پلس ، پہلے سے بک کی ہے۔ رنگ روڈ پشاور میں آٹوموبائل ورکشاپ چلانے والے انجینیر محمد عارف نے گوادر پرو کو بتایا کہ کے پی میں چانگن کے لئے ایک سال میں 300 یونٹ بیچنا ایک بڑی کامیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس خطے میں زیادہ تر لوگ سیکنڈ ہینڈ امپورٹڈ کاریں خرید ناپسند کرتے ہیں ، تاہم ، السوین اس حیثیت کو چیلنج کرنے کی صلاحیت رکھتی ہیں۔ چانگن جس کا مطلب چینی زبان میں ‘دیرپا حفاظت’ ہے ، چین میں ایک اعلی آ ٹوموبائل گروپ ہے اور ایک اعلی فروخت ہونے والا مقامی چینی آٹوموٹو برانڈ ہے۔

شیئر کریں

Top