گلگت بلتستان سونامی کی تباہی کے اثرات رونما مہنگائی،بے روزگاری کو نہ روکا گیا تو خدشہ ہے عوام بھوک سے مرینگے:اپوزیشن لیڈر

بدقسمتی سے کھلاڑی نما اناڑی نے ملک کو تنزلی کی طرف دھکیل دیا ہے، ڈھائی سالوں میں کسی ایک شعبے یا محکمے میں بہتری تو درکنار کوئی آثار بھی نظر نہیں آرہے ہیں
عوام کسی بھی قیمت پر کٹھ پتلیوں کو برداشت نہیں کرینگے، موجودہ حکومت کی لاپرواہی کی یہی حالت برقرار رہے تو عوامی غیض و غصب انہیں خس و خاشاک کی طرح بہا کر لے جائے گا
گلگت (بادشمال نیوز )قائدِ حزبِ اختلاف گلگت بلتستان اسمبلی و صوبائی صدر پیپلز پارٹی گلگت بلتستان امجد حسین ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ عمران نیازی کا ایجنڈا غربت کے بجائے غریبوں کا خاتمہ ہے۔ نئے پاکستان کے نام پر غریبوں کا قبرستان بنایا جارہا ہے۔ قوم ایک یونین کونسل کی سطح کے آدمی کو ملک پر مسلط کرنے کا خمیازہ بھگت رہی ہے۔ تبدیلی سرکار نے مہنگائی کے ستائے عوام پر ایک ماہ میں دوسری بار پیٹرول بم گرا کر رہی سہی کسر بھی پوری کر دی سونامی نے واقعی تباہی مچا دی ہے۔ ستر سالہ تاریخ کی بد ترین مہنگائی نے عوام کے منہ سے نوالہ تک چھین لیا تین سو کنال کے محل میں رہ کر مافیاز کے خرچے پر عیاشیاں کرنے والے شخص کے منہ سے ریاستِ مدینہ کا نام اس مقدس ریاست کی توہین ہے۔ عمران نیازی کو یہ بھی نہیں معلوم کہ ریاستِ مدینہ میں عوام کا خون نہیں چوسا جاتا تھا بلکہ انکی فلاح و بہبود کے لئے عملی اقدامات کئے جاتے تھے۔ ملکی تاریخ میں پہلی بار بیرون ملک پی آئی اے کے جہاز کو ضبط کرنا قومی وقار پر حملے کے مترادف ہے۔ بدقسمتی سے اناڑی نے ملک کو تنزلی کی طرف دھکیل دیا ڈھائی سالوں میں کسی ایک شعبے یا محکمے میں بہتری تو درکنار کوئی آثار بھی نظر نہیں آرہے ہیں۔ کنٹینر پر کھڑے ہو کر بلندو بانگ دعوے کر کے نوجوانوں نسل کو گمراہ کرنے والا عمران نیازی قوم کی نظروں میں گر چکا خود داری کا درس دینے والے نے تاریخ کا سب سے بڑا کشکول اٹھا کر اپنے آپ کو کاذبِ اعظم ثابت کر دیا قوم کو سنہرے خواب دکھانے والوں نے زندگی اجیرن بنا کر رکھ دی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ جس کا خرچہ مافیاز چلاتے ہوں اسے غریب عوام کی مشکلات اور دکھ درد کا احساس کیسے ہو سکتا ہے۔ خاندانی نظام اور احساس سے عاری شخص سے خیر کی توقع رکھنا دیوانے کا خواب ہوگا۔ گلگت بلتستان میں بھی اب سونامی کی تباہی کے آثاررونما ہونا شروع ہوئے ہیں۔ اگر مہنگائی اور بیروزگاری کے عفریت پر قابو نہ پایا گیا تو خدشہ ہے کہ عوام بھوک سے مرجائیں گے۔ گلگت بلتستان دنیا کا واحد خطہ ہے جس کے حکمران اپنے حلقوں میں بیٹھ کر عوام کے مسائل حل کرنے کے بجائے وفاقی دارالحکومت میں سردیاں گزارنے میں مشغول ہیں۔عمران خان نے عوام سے کیا ہوا ایک بھی وعدہ پورا نہیں کیا غریب عوام نئے پاکستان میں موجودہ کمر توڑ مہنگائی سے تنگ آگئے ہیں گلگت بلتستان کے عوام کسی بھی قیمت پر کٹھ پتلیوں کو برداشت نہیں کریں گے اگر یہی حالات رہے تو عوامی غیض و غصب انہیں خس و خاشاک کی طرح بہا لے جائے گا۔
امجد ایڈووکیٹ

شیئر کریں

Top