گلگت بلتستان حساس خطہ دھاندلی پر شدید احتجاج ہوگا

pic_1547916531.jpg

پی ڈی ایم سے ہمارا انتخابی اتحاد نہیں عوامی طاقت سے آنے والی جماعت کو خوش آمدید کہیں گے: جمعیت علمائے اسلام
استور(رفیع اللہ آفریدی سے) جمعیت علمائے اسلام گلگت بلتستان کے صوبائی سربراہ مولانا عطاء اللہ شہاب نے استور میں جلسہ عام سمیت صحافیوں سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان ایک حساس خطہ ہے اگر گلگت بلتستان اسمبلی انتخابات کے موقع پر ذرا برابر بھی دھاندلی کی کوشش کی گئی تو پھر شدید اور نہ رکنے والا احتجاج ہوگا۔ جس کا نقصان مرکزی حکومت کو پہنچ سکتا ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے ساتھ جے یو آئی کا سیاسی اتحاد تو ضرور ہے مگر انتخابی اتحاد قطعاً نہیں البتہ گلگت بلتستان میں تمام سیاسی جماعتیں اچھے ماحول میں انتخابی مہم جاری رکھے ہوئے ہیں ان کا کہنا تھاکہ تاحال دھاندلی کے حوالے سے کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہوگا اور اس طرح کے اثرات نظر بھی نہیں آرہے اصل میں دھاندلی کا معاملہ پولنگ اسٹیشن سمیت گنتی کے دوران ایک خاص منصوبہ بندی کے تحت کیا جاتا ہے اس لیے مثالی اور شفاف انتخابات کیلئے ارباب اختیار کو ذمہ داری کا ثبوت دینا ہوگا۔ ان کا کہنا تھا کہ قائد جے یوآئی مولانا فضل الرحمن نے پنجاب کے مختلف علاقوں میں پی ڈی ایم کے جلسوں سے خطاب کے موقع پر کہا تھا کہ اس طرح کا عبوری آئینی صوبہ جہاں گلگت بلتستان کے عوام کی تقسیم کی بات ہو درست نہیں اگر حکومت مخلص ہے تو مزید علاقوں کو بھی شامل کرکے مسئلہ کشمیر متاثر کیے بغیر سب کو قابل قبول عبوری آئینی صوبہ دیا جائے۔ مولانا عطاء اللہ شہاب نے مزید کہا کہ میرا ذاتی مطالبہ ہے کہ 18ویں ترمیم کے تحت جو اختیارات دیگر صوبوں کو حاصل ہیں وہ گلگت بلتستان کو بھی اسی طرح حاصل ہونے چاہیے اور پارلیمنٹ میں نشستوں کی تقسیم جس طرح صوبہ بلوچستان کیلئے رکھی گئی ہیں گلگت بلتستان میں بھی اسی فارمولے کے تحت قومی اسمبلی اور پارلیمنٹ میں نشستیں مختص کرنی ہونگی۔ انہوں نے ایک سوال کے جواب میں گلگت بلتستان کے 13 انتخابی حلقوں میں مضبوط امیدوار کھڑے کررکھے ہیں اگر عوام کی طاقت سے کوئی بھی جماعت اکثریت حاصل کرتی ہیں تو اسے خوش آمدید کہیں گے۔ استور میں جلسہ عام کے موقع پر ان کے ہمراہ کراچی ڈویژن کے رہنما مولانا شفیق احمد، خطیب اہل سنت استور قاری گلزار احمد،خطیب جامعہ مسجد قاری عبدالحکیم اور جے یو آئی کے نامزد امیدوار مولانا امداد اللہ ودیگر رہنماؤں بھی موجود تھے۔
مولانا عطاء اللہ شہاب

شیئر کریں

Top