پریس کانفرنس کے دوران شاہد خاقان اور مصدق ملک کی پی ٹی آئی کارکنوں سے ہاتھا پائی

inp-06-23.jpg

ISLAMABAD: Pakistan Muslim League-Nawaz (PML-N) leaders Shahid Khaqan Abbasi Musadik Malik were manhandled during a scuffle between the PML-N leaders and PTI workers that broke out outside the parliament lodges on Saturday. INP

اسمبلی کے اندر اور باہر پی ٹی آئی بدمعاشی کا مقابلہ کریں گے، شاہد خاقان عباسی
4اور 5 مارچ کی درمیانی رات نوٹیفکیشن جاری ہوا، صدر، وزیراعظم، سپیکر غیر قانونی اجلاس بلانے میں ملوث ہیں، عمران خان کے پاس اکثریت ہے نہ بات کر سکتے ہیں صرف بدمعاشی کرسکتے ہیں، وزیر خزانہ کو شکست کے دن سے عمران خان کی اکثریت ختم ہو چکی ہے، سابق وزیر اعظم کی پریس کانفرنس
اسلام آباد(آئی این پی)پاکستان مسلم لیگ(ن) کے رہنما سابق وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ ہم نے میدان خالی نہیں چھوڑا، اسمبلی کے اندر اور باہر پی ٹی آئی بدمعاشی کا مقابلہ کریں گے، پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 4اور 5 مارچ کی درمیانی رات نوٹیفکیشن جاری ہوا، صدر، وزیراعظم، سپیکر غیر قانونی اجلاس بلانے میں ملوث ہیں، عمران خان کے پاس اکثریت ہے نہ بات کر سکتے ہیں صرف بدمعاشی کرسکتے ہیں، ہم نے میدان خالی نہیں چھوڑا، میدان میں موجود ہیں، بد معاشی کا مقابلہ اسمبلی کے اندر اور باہر بھی کریں گے، بد معاشی کی سیاست ملک میں نہیں چلے گی۔شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ ہم گھبرانے والے نہیں، ہم نے شرافت کی سیاست کی، عمران خان کو ہٹا کر دم لیں گے، وزیراعظم کے نمائند گان کو کوئی اخلاقی تربیت نہیں، وزیر خزانہ کو شکست کے دن سے عمران خان کی اکثریت ختم ہوچکی، ہم نے ان چوروں اور غنڈوں کا مقابلہ کرنا ہے،لیگی رہنماؤں کی پریس کانفرنس کے دوران پی ٹی آئی کارکنوں نے نعرے بازی کی، جس کے بعد شاہد خاقان عباسی اور مصدق ملک کی پی ٹی آئی کارکنوں سے ہاتھا پائی ہوئی،پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر ماحول میں گرما گرمی ہوئی، جس کے بعد حالات کشیدہ ہوئے، شاہد خاقان عباسی کی نیوز کانفرنس کے دوران پی ٹی آئی کارکنوں نے شور شرابہ کیا، تحریک انصاف کارکنوں نے وزیراعظم عمران خان کے حق میں نعرے بازی کی، پی ٹی آئی ارکان نے عمران خان کی حمایت میں پلے کارڈ اٹھائے رکھے ہیں،شاہد خاقان عباسی پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر دیگر رہنماؤں کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کر رہے تھے کہ اس دوران پی ٹی آئی کے کارکنان ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھائے وہاں پہنچ گئے اور مسلم لیگ ن کے خلاف نعرے بازی کی جس کی وجہ سے شاہد خاقان عباسی کو میڈیا سے گفتگو کرنے میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑا،شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ پاکستان کی عوام نے اپنا مینڈیٹ دے دیا ہے اور اب وزیر اعظم کے پاس اکثریت ہے نہ بات کرسکتے ہیں۔ پی ٹی آئی والے صرف بدمعاشی کرسکتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ صدر، وزیر اعظم اور اسپیکر غیرقانونی اجلاس بلانے میں ملوث ہیں اور ہم نے چوروں کا ہر فورم پر مقابلہ کرنا ہے۔ ہم گھبرانے والے نہیں ہیں۔انہوں نے کہا کہ وزیر خزانہ کو شکست کے دن سے عمران خان کی اکثریت ختم ہو چکی ہے۔

شیئر کریں

Top