ضلع غذر کے گاوں شیرقلعہ کے نالوں میں شدید طغیانی کے بعد سیلابی ریلے نے شیر قلعہ میں تباہی مچادی

g13.jpg

گلگت ( خصوصی رپورٹ) ضلع غذر کے گاوں شیرقلعہ کے نالوں میں شدید طغیانی کے بعد سیلابی ریلے نے شیر قلعہ میں تباہی مچادی۔ اب تک کی اطلاعات کے مطابق چھ افراد جاں بحق اور کئ افراد ذخمی اور لاپتہ ہیں۔ ڈھائی سو سے ذائد گھر زد میں آنے کی وجہ سے ہزاروں لوگ بے گھر ہوگئے ہیں اور کھلے آسمان تلے بے یارومدگار پڑے ہیں۔ کروڈوں کی قیمتی املاک جن میں فش فارمز، سڑکیں، واٹر چینلز، فصلیں، درخت وغیرہ شامل ہیں مکمل تباہ ہوگئے ہیں۔ اس وقت بھی مکمل نالہ اور خوفناک سیلابی ریلہ گاوں کے وسط سے بہہ رہا ہے عوامی حلقوں نے کہا ہے کہ۔ ذمہ دار اداروں اور حکومت نے بروقت کارروائی نہیں کی تو مزید تباہی کا خدیشہ ہے۔ ایمرجنسی نافذ کرنے کے علاوہ پاک آرمی اور دیگر اداروں کی مدد لینے کی ضرورت ہے تاکہ ضلع غذر تحصیل پونیال کے اس سب سے بڑے گاوں شیرقلعہ کو مزید تباہی سے بچایا جاسکے۔

حکومت کو سٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر مسائل کا حل نکالنے کی ضرورت ہے ، امجد ایڈووکیٹ

download.jpg

گلگت(شہزاد حسین سے) اپوزیشن لیڈر گلگت بلتستان امجد ایڈوکیٹ نے کہا کہ اسیروں کا معاملے پر جو فارمولا طے ہو ہے امید ہے بیت جلد بریک تھرو ہوگا گلگت میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کو سٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر مسائل کا حل نکالنے کی ضرورت ہے جو فارمولا طے ہوا ہے اس پر اگر عمل درآمد نیں ہوتا اور اگر دوسری دفعہ دھوکہ ہو تو ہمارے پاس اسمبلی سے استعفیٰ دینے کے علاؤہ کوئی اور چارہ نہں ہے اور ہم استعفی دینگے ۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت اسلام باد میں بیٹھنے کے بجائے گلگت بلتستان آکر یہاں کے مظاہرین کے ساتھ بیٹھ کر مسلئے کا حل نکالے ۔وزرا نے انفرادی طور پر کوششیں ضرور کی ہے ۔انیوں نے کہا کہ ہنزہ ناصر آباد میں گزشتہ کئی دنوں سے عوام اجتجاج کرہے ہیں لیکن کسی نے دادرسی تک نیں کی ہے انہوں نے کہا کہہ اس وقت نظام زندگی مفلوج ہے اور اجتجاج اور مظاہروں کی وجہ سے سیاحت کو بھی نقصان ہوا اور آیندہ مزید نقصانات سے بچنے کے لیے حکومت کو سنجیدگی کا مظاہرہ کرنے کی ضرورت ہے ۔انہوں نے کہا کہ اسیروں کے حوالے سے جو فارمولہ طے ہو ہے اس پر عمل درآمد کیا جائے یا اگر اور کوئی فارمولہ ہے تو وہ بند کمروں کے بجائے سامنے لایا جائے اور اس پر سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لیا جائے تاکہ مسلئے کا حل نکالا جاسکے اور علاقے میں نطام زندگی بحال ہوسکے اگر آئین اور ضابطے کے تحت حل نیں نکالا جاتا ہے تو اجتجاج کرنے والوں میں اتنی طاقت ہے کہ وہ آگلے منٹ میں پورے گلگت بلتستان کو جام کرسکتے ہیں

کمشنر آفس بلتستان میں شجرکاری کے حوالے سے اجلاس کا انعقاد

a98cce99-9984-44ae-a8b0-e62eb0b16d19.jpg

آج کمشنر آفس بلتستان میں شجرکاری کے حوالے سے ایک اجلاس منعقد ہوا۔ اجلاس میں چاروں اضلاع کے ڈپٹی کمشنرز کے علاوہ کنزرویٹر فارسٹ بلتستان سرکل، ڈائیریکٹر محکمہ زراعت ، اسسٹنٹ ڈائریکٹر محکمہ سیاحت، پروگرام آفیسر جی بی آر ایس پی نے شرکت کی۔ اجلاس میں چیف سیکٹری آفس سے جاری کردہ Greening” the cities & urban centres” کے حوالے سے گفت وشنید ہوئ۔ اس موقع پر فیصلہ ہوا کہ یکم جولائی سے پھل دار اور صدابہار پودوں کی شجر کاری کا آغاز کیا جائے گا۔ اجلاس میں چیف سیکریٹری گلگت بلتستان کی طرف دی گئی ہدایات کے مطابق یہ بھی طے ہو ا کہ تمام دفاتر اور رہائشگاہوں میں ذیادہ سے ذیادہ صدا بہار درخت لگائے جائیں تاکہ مستقبل میں علاقے کو آلودگی سے پاک رکھا جا سکے اور سردیوں میں آکسیجن کی کمی بھی پوری ہو سکے۔ اس موقع پر تمام ڈپٹی کمشنرز کو یہ بھی ہدایت ہوئ کہ وہ اپنے اپنے اضلاع میں مقامات کی نشاندہی جہاں شجر کاری کو یقینی بنایا جاسکے۔

اسلام آباد پولیس کچھ دن قبل اغوا ہونیوالی قرت العین لڑکی کو بازیاب کرانے میں ناکام

1d70250f-8349-4582-be12-012a819ffb44.jpg

اسلام آباد پولیس شہزاد ٹان علی پور اسلام آباد سے کچھ دن قبل اغوا ہونے والی لڑکی کو بازیاب کرانے میں ناکام۔ذرائع کے مطابق اغوا کرنے والے ملزم قیص نامی لڑکے کو محلے میں لگائی گئی CCTV کمیرے کی مدد سے پکڑ کر پولیس کے حوالے کردیا ہے اور ایف آئی آر درج کی ہے مگر 14 سالہ قرت العین جس کا تعلق سکردو سے ہے جو کئی دن گزرنے کے بعد بھی شہزاد ٹان پولیس بازیاب کرانے میں کامیاب نہیں ہوئی۔ عدالت شائد کسی گروہ کا انتظار کر رہی ہے جو خود بچی کو پیش کر کے کہیں گے کہ یہ اب اس لڑکے کی بیوی ہے۔ پھر کوئی سفید ڈریس میں آکر کہے گا میں اس کا باپ ہوں ۔ اور پھر عدالت فیصلہ سنائے گی کہ جہاں چاہے جا سکتی ہے۔جاگو کہ بہت دیر ہو جائے گی آج گھروں میں لڑکیاں محفظ نہیں جاگو۔

گریڈ پلٹنز سپر لیگ فٹ سال چیمپئین شپ پلٹنز وائیررز نے گریڈ پلٹنز کو شکست دیکر ٹائیٹل اپنے نام کر لیا

048a6961-dc77-4a6e-a6a5-35e055149845.jpg

گلگت (سپیشل رپورٹر ) گریڈ پلٹنز سپر لیگ فٹ سال چیمپئین شپ پلٹنز وائیررز نے گریڈ پلٹنز کو شکست دیکر ٹائیٹل اپنے نام کر لیا محمد عمر نے مین اف دی میچ اور بہترین سکورر کا ایوارڈ حاصل کر لیا اختتامی میچ کے مہمان خصوصی سابق وزیراعلی گلگت بلتستان حافظ حفیظ الرحمان تھے جنہوں نے بہترین ایونٹ کے انعقاد کو سراہا اور بہترین ایونٹ کے انعقاد پر ارگنائزنگ کمیٹی کے اور فٹسال کے صدر سلیم رضا کو مبارک باد دی تفصیلات کے مطابق اتوار کے روز گلگت سٹی پارک میں جی بی فٹسال ایسوسی ایشن کے زیر نگرانی میں گریڈ پلٹنزز سپر لیگ فٹسال چیمپئین شپ 2022 کے مناسبت سے پلٹنزوائررز اور گریڈ پلٹنز کے درمیان فائینل میچ ہوا جسمیں دونوں ٹیموں نے عمدہ کھیل پیش کیا جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کرکے پلٹنزز وائیررز کلب نے گریڈ پلٹنز کو 2 گول کے مقابلے میں 6 گول سے شکست دے کر گریڈ پلٹنز سپر لیگ فٹسال چیمپئین شپ کا ٹائیٹل اپنے نام کر لیا محمد عمر نے 4 گول کرکے میچ کے بہترین کھلاڑی قرار پاے اور ٹورنامنٹ میں 9 گول کرکے بہترین سکورر کا ایوارڑ بھی حاصل کر لیا

قرآت العین کے اغوا کے خلاف اسلام آباد پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ

46afeb3d-da68-4ea6-bc49-b2b81b1e8386.jpg

اسلام اباد گزشتہ دنوں گلگت بلتستان سے تعلق رکھنے والی قرآت العین کے اغوا کے خلاف اور بازیابی کے لیے اسلام اباد پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیا مظاہرے سے رکن کونسل ایوب شاہ پی پی پی کے رہنما بشیر احمد خان اور دیگر مقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ اغوا ہونے والی بچی کو فوری بازیاب کرانے کا مطالبہ کیا ہے سینئر نائب صدر پاکستان پیپلز پارٹی گلگت بلتستان بشیر احمد خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ میں ابھی گلگت بلستان ہاؤس میں تھا تو شاہ ناصر صاحب نے کہا کہ ہماری سکردو کی ایک بچی کے ساتھ یہ واقعیہ پیش آیا ہے جب سنا تو انتہائی افسوس ہوا کہ گلگت بلتستان کے لوگوں ککے ساتھ یہ کیا ہونے جارہا ہے اسلام آباد پاکستان کا کپیٹل ہے اس کپیٹل کے اندر گلگت بلتستان کے لوگوں کو تحفظ نہیں ہے ہمارے گلگت بلتستان میں 10 اضلاع ہے وہاں پنجاب کے ہر شہری رہتے ہے ھم ان کا تحفظ اپنا حق سمھجتے ہے پاکستان کے ریاستی ادارے گلگت بلتستان کے لوگوں کو تحفظ کیوں نہیں دے رہے ھے اگر ہماری بچی ایک دو دن میں بازیاب نہیں ہوئی تو کے کے ایچ بلاک کرینگے اور پورا گلگت بلتستان جام کرینگے اکر بچے کے ساتھ کچھ ہوا تو ہم اپنے بدلہ لے کر دم لینگے اور یہ ایک واقیعہ نہیں ہوا ہے بلکہ چار پانچ واقیعات ہوئی ہے ابھی تک گلگت بلتستان کے لوگوں کو انصاف نہیں ملا ہے رکن کونسل ایوب شاہ نے خطاب کر تے ھوئیں کہا ہے کہ مجھے بھی بہت افسوس ہوا یہ سن کر اور إن شاءالله ہم یہاں کے انتظامیہ سے رابطہ کرینگے کو ملزم کو سی وی کیمرا کے زریعے پکڑا گیا تھا تو پھر ملزم کو کیوں چھوڑ اس کے زمہ دار یہاں کے انتظامیہ اور پولیس ہے فورا ہماری بیٹی کو بازیاب کریں ورنہ ہمارا اگلا لائحہ عمل برا ہوگا دیگر رہنماؤں نے بھی خطاب کے سب کا مطالبہ یہ ھے بچی کو جلد سے جلد بازیاب کیا جائیں

معاشی بدحالی کے باعث گلگت شہر میں سڑکوں سے گاڈیاں غائب اور کاروباری مراکز ویران

3ede0e98-9134-4786-91d0-404424a6cd82.jpg

گلگت   ملک بھر میں مہنگائی کی سونامی اور معاشی بدحالی کے باعث گلگت شہر میں سڑکوں سے گاڈیاں غائب اور کاروباری مراکز ویران ہو گئے۔بادشمال سروے میں یہ بات سامنے آئی کہ ملک میں ایک ہفتے میں دوسری مرتبہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں غیر معمولی اضافے اور اوپن مارکیٹ میں ڈالر کے مقابلے میں روپے کی گرتی ہوئی قدر سے گلگت بلتستان میں مہنگائی کے شعلے بلند ہونے سے شہری اور کاروباری طبقے شدید پریشانیوں کا شکار ہونے لگے ہیں جن کا کہنا ہے کہ گزشتہ دو روز سے ٹرانسپورٹ کو پچاس فیصد غائب ہے جبکہ مارکیٹیں کساد بازاری کے شکار ہیں اس بارے میں پونیال روڈ کے کریانہ سٹور کے مالک محمد نعیم کا کہنا ہے کہ عام دنوں میں یکم سے دس تاریغ ٹک تنخواہیں ملنے پر مارکیٹ چہل پہل ہوتی تھی مگر گزشتہ تین روز میں تنخواہیں لینے کے باوجود گاہک غائب ہیں۔جس سے کاروباری حجم میں ساٹھ فیصد تک کمی آ ئی ہے۔اسی کے ساتھ حسین نامی سبزی فروش کا کہنا تھا کہ تنخواہوں کی وصولی کے باوجود خرید و فروخت کا رحجان انتہائی مایوس کن ہے جس سے فروٹس اور سبزیاں فروخت سے زیادہ خراب ہو جاتی ہیں جس سے روانہ کا نقصان کی شرح بڑھ گئی ہے۔شہر کی سب سے بڑی مارکیٹ این ایل آ ئی مارکیٹ میں کلاتھ ہاؤس کے مالک حبیب الرحمن نے بتایا کہ یکم سے جو خریداری اس قبل ہوتی تھی وہ اب نصف کم ہو گئی ہے۔جس سے کاروباری بقاء بھی خطرے میں پڑ گیاہے۔ نسیم سنیما روڈ میں موجود حجام محمد فیصل کا کہنا ہے کہ مہنگائی سے انکے کاروبار میں کوئی فرق نہیں پڑا ہے اور لوگ اپنی ضروریات کے مطابق رجوع کر لیتے ہیں۔بادشمال سے بات چیت میں شہریوں اور دوکانداروں کا کہنا تھا کہ عمران حکومت کو وہ پہلے مہنگائی کے زمہ دار سمجھتے تھے مگر اتحادی حکومت اس میں کمی کی بجائے دگنا اضافہ ہو گیا ہے اس لیے اب کسی حکمران پر مہنگائی پر قابو کی باتوں پر یقین کرنا مشکل ہو گیا ہے شہریوں نے مہنگائی پر قابو پانے کے افسران ،ججوں اور وزراء مشیروں کے مراعات اور تنخواہیں میں واضح کمی پر زور دیا۔

وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید ایک روزہ نجی دورے پر استور پہنچ گئے

12.jpg

استور ( رفیع اللہ خان آفریدی )وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید ایک روزہ نجی دورے پر استور پہنچ گئے وزیر اعلی خالد خورشید پاکستان تحریک انصاف کے صوبائی صدر بنے کے بعد پہلی بار اپنے آبائی ڈسڑکٹ آمد کے موقعے پر پاکستان تحریک انصاف کے کارکنان اور عوام علاقہ نے جگہ جگہ پھولوں کے ہار پہنا کر شاندار استقبال کیا وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید کو مختلف جگہوں میں عوام نے روک کر اپنے مسائل بھی بتائے وزیر اعلی گلگت بلتستان خالد خورشید نے کے پی این سے بات کرتے ہوئے کہا کہ گلگت بلتستان میں ہم نے اربوں روپے کے میگاہ منصوبے لائے ہیں اور ان منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لیے ہر ممکن کوشش کرینگے استور ویلی روڈ اور بوبند شگرتھنگ روڈ استور کی تعمیر ترقی کے لیے سنگ میل ثابت ہونگے ان پروجیکٹس کی لینڈ کمپنسیشن کی مد میں بجٹ ڈپٹی کمشنر استور کے اکانٹ میں منتقل کردیا گیا ہے استور شہر کے اندر سٹی بیوٹفیکشن پلان کے تحت شہر کی سڑکوں کو بہتر بنایا جائے گا ۔گلگت بلتستان کے اندر عدم اعتماد کا خواب دیکھنے والوں کے لیے کل پشاور کے اجلاس کے بعد جواب ملا ہوگا پاکستان تحریک انصاف کے اندر کوئی گرپوں کی گنجائش نہیں ہے جمہوری پارٹیوں کے اندر اختلاف رائے جمہوریت کا حسن ہے ہم نے تمام نارض ارکان کے تحفظات سنے اور ان کو دور کیے انشاللہ ہم کل بھی ایک تھے اور آج بھی ایک ہیں اور ہمشہ سے ایک رہیں گے گلگت بلتستان کی ترقی میں روکاوٹ وفاقی حکومت کے دن گنے جاچکے ہیں بہت جلد ان کو صفایا ہوگا انشاء اللہ ایک بار پھر وفاق میں پاکستان تحریک انصاف کی حکومت آئے گی اور عمران خان اسلامی جمہوریہ پاکستان کا وزیر اعظم ہوگا وزیر اعلی گلگت بلتستان آج استور میں دن بھر مختلف عمائدین سے ملاقاتیں کی اور عوامی مسائل بھی سنے وزیر اعلی گلگت بلتستان کل بھی استور میں عوامی وفود سے ملاقاتیں کرینگے ۔

گلگت بلتستان کے ضلع گانچھے میں مشابرم فیسٹیول کے تحت پولو ٹورنامنٹ کا انعقاد

f45a025d-62b3-465e-beb8-b196daf4ab20.jpg

گھانچے: گلگت بلتستان کے ضلع گانچھے میں مشابرم فیسٹیول کے تحت پولو ٹورنامنٹ کا انعقاد کیا گیا۔ انوری شہید پولو کلب، دانشم کے زیر اہتمام ٹورنامنٹ میں آٹھ ٹیموں نے حصہ لیا۔ فائنل میچ مشبرم اے ٹیم اور انوری شہید اے ٹیم کے درمیان کھیلا گیا۔ تقریب تقسیم انعامات کے مہمان خصوصی فورس کمانڈر گلگت بلتستان میجر جنرل جواد احمد تھے جنہوں نے ونر اور رنر اپ ٹیموں میں انعامات تقسیم کئے۔ فورس کمانڈر نے گلگت بلتستان میں کھیلوں کے مقابلوں کے انعقاد کو سراہا اور نوجوانوں میں صحت مندانہ سرگرمیوں کی اہمیت پر زور دیا۔

حکومت گلگت بلتستان گندم سبسڈی پر پچاس فیصد کمی پر بھرپور احتجاج کا اعلان

7e60d34a-a35d-4621-a17c-ab12b72b27fc.jpg

اسلام آباد(حمید پیرزادہ ) حکومت گلگت بلتستان نے وفاق کی جانب سے بجٹ میں کٹوتی اور گندم سبسڈی پر پچاس فیصد کمی پر بھرپور احتجاج کا اعلان کردیا. گلگت بلتستان کے وزراء نے اسلام آباد نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی ایم کی وفاقی حکومت کی طرف سے گلگت بلتستان کے بجٹ میں کٹوتی گلگت بلتستان دشمنی اور بم گرانے کے مترادف ہوگا. کسی ایک شخص کی غلطی پر گلگت بلتستان کی عوام کو بھوکے مارنے اور غربت کی طرف دھکیلنے کی کوشش نہ کی جائے. گلگت بلتستان کی اپوزیشن جماعتیں بجٹ میں کٹوتی کے خلاف گلگت بلتستان کی عوام اور حکومت کا ساتھ دیں کیونکہ گلگت میں ہم سب کا سانجھا ہے. تفصیلات کے مطابق وزیر اطلاعات گلگت بلتستان فتح اللہ خان ، سنئیر وزیر راجہ زکریا، وزیر خزانہ جاوید منوا، ڈپٹی سپیکر نزیر ایڈووکیٹ، مشیر قانون سہیل عباس نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ کچھ دنوں سے جو ملک کی حالت ہے وہ عوام کے سامنے ہیں. ایک منتخب حکومت کو اندرونی اور بیرونی سازش کی گئی. گلگت بلتستان گزشتہ کئی دہائیوں سے اپنا حق مانگ رہا ہے. وزیر اطلاعات گلگت بلتستان فتح اللہ خان نے کہا کہ سابق وزیراعظم عمران خان نے گلگت بلتستان کو عبوری صوبہ بنانے کا وعدہ کیا تھا جو تکیمل کے مراحل میں تھا تو وفاق میں رجیم تبدیل ہوا. گلگت بلتستان کے خطے میں لوگوں نے کئی قربانیاں دی ہیں. وفاقی میں موجود پی ڈی ایم کی مرکزی حکومت نے معیشت کا پھٹا بیٹھایا ہے اور ائی ایم ایف کے سامنے لیٹ گئے ہیں. یہ لوگ عمران خان کو اسرائیل کا ایجنٹ کہتے تھے اب یہ لوگ خود ایجنٹ ثابت ہو گئے. جون میں وفاقی حکومت بجٹ پیش ہو گا اور اس کے بعد گلگت بلتستان کا بھی بجٹ پیش ہو گا. ستر کی دہائی سے گلگت بلتستان کی جغرافیائی صورتحال کو دیکھ گندم پر سبسڈی دی گئی تھی تاہم گزشتہ سال عمران خان کی حکومت نے گندم سبسڈی چھے ارب سے بڑھا کر اٹھ ارب روپے کردیا تھا مگر اب پی ڈی ایم کی وفاقی حکومت نے یہ سبسڈی پچاس فیصد ختم کر دی ہے اور اس کا نوٹیفکیشن بھی جاری ہوا ہے. وفاق سمیت تمام اسٹیک ہولڈرز کو معلوم ہے صرف دو فیصد علاقہ زرعی ہے. وزیر خزانہ گلگت بلتستان جاوید منوا نے کہا کہ اس حکومت نے چارج سنبھالتے ہیں گلگت بلتستان پر ڈرون حملہ کیا ہے. گلگت بلتستان کو پی ڈی ایم کی مرکزی حکومت نے کمزور کرنے کی کوشش کی ہے. گلگت بلتستان دفاعی اعتبار سے بہت اہمیت کا حامل ہے. گلگت بلتستان کو ستر کی دہائی سے سبسڈی دی جارہی ہے. ہم وفاقی حکومت سے بھرپور احتجاج کرتے ہیں. گندم کی سبسڈی پر جو کٹ لگایا جائے گا جو عوامی ردعمل ائے گا ہم عوام کے ساتھ کھڑے ہوں گے. گندم کی سبسڈی پر کٹوتی بلکل منظور نہیں ہے. ترقی کے بجٹ پر پچاس فیصد کٹ لگایا گیا ہے. پی ٹی ائی حکومت نے 370 ارب ایک پیکج دیا تھا کہا جا رہا ہے کہ ان منصوبوں پر بھی کٹ لگایا جانے لگا ہے. پہلی بار گلگت بلتستان کو خاطر خواہ حصہ ملنے جا رہا تھا. صرف ایک فرد کی وجہ سے گلگت بلتستان کے ساتھ ناانصافی نہ کی جائے. اگر پارٹی کی بنیاد پر ایسا کیا گیا تو یہ اس خطے کے ساتھ نا انصافی ہو گی. حکومت کو متنبہ کرتے ہیں اگر ایسا کیا گیا تو عوامی ردعمل ائے گا. اگر گلگت بلتستان کے بجٹ کو بڑھا نہیں سکتے تو کٹ بھی نا لگائیں. وزیر اطلاعات فتح اللہ خان سے صحافی نے سوال کیا کہ گلگت بلتستان میں عدم اعتماد کے حوالے سے باز گشت ہے وزیر اعلی اور اپ لوگ الگ الگ ہیں حق کیسے لیں گے جس پر وزیر اطلاعات نے کہا کہ ابھی ہم موٹروے پر ہیں کچے راستے پر نا لائیں ان ایشوز پر ہم سب ایک پیج پر ہیں.

Top